امریکہ کی شمالی مغربی ریاستوں میں جنگل کی آگ بے قابو، کورونا وباء بڑھ سکتی ہے 

امریکہ کی شمالی مغربی ریاستوں میں جنگل کی آگ بے قابو، کورونا وباء بڑھ سکتی ...

  

 واشنگٹن (اظہر زمان، بیورو چیف) امریکہ پہلے ہی کورونا وائرس کی زد میں ہے بلکہ اس کے مغربی اور جنوبی حصوں میں اس کی دوسری لہر آگئی ہے اور اب مغربی ساحل پر کیلیفورینا کے جنگلات میں آگ تباہی پھیلا رہی ہے اور جنوب مشرقی ریاست فلوریڈا میں ایک نیا سمندری طوفان ”سیلی“  اس کے ساحل سے ٹکرا گیا ہے۔ یہ طوفان اس ساحلی ریاست میں سیلابی ریلے، تند ہواؤں اور بارشوں کے سلسلے کیساتھ تباہی پھیلا رہا ہے اور اب قریبی ریاست الاباما بھی اس کی لپیٹ میں آگئی ہے۔ ریاست فلوریڈا میں طوفان کا مرکز ساحلی شہر پنساکولا ہے جہاں سیکڑوں گھر اس کی زد میں آگئے ہیں۔ فلوریڈا اور الاناما میں کثیر علاقے میں درخت گرنے اور سڑکوں پر پانی کے ریلے سے ٹریفک بند ہو چکی ہے۔ محکمہ موسمیات کے مطابق ”سیلی“ کے بعد مزید سمندری طوفان امریکہ کے مشرقی ساحل کا رخ اختیار کرسکتے ہیں۔ ادھر امریکہ کے مغربی ساحل پر واقع شمال مغربی ریاستوں کے جنگلات میں آ گ بے قابو ہو چکی ہے جہاں آخری اطلاعات کے مطابق آگ سے ہلاکتوں کی تعداد 40تک پہنچ گئی ہے۔سیکڑوں مکان خاکستر ہو چکے ہیں اور متاثرہ علاقوں سے آبادی کا انخلاء جاری ہے۔ متاثرہ ریاستوں میں کیلیفورینا، اوریگون اور واشنگٹن شامل ہیں۔ آگ کی وجہ سے اٹھنے والے دھوئیں سے امریکی شہروں سان فرالنکو، سیاٹل اور پورٹ لینڈ میں آسمان سرخ دکھائی دے رہا ہے اور لوگوں کو سانس لینے میں تکلیف ہو رہی ہے۔ خیال ظاہر کیا جارہا ہے کہ آگ اور دھوئیں کے باعث ان ریاستوں میں جہاں کورونا وائرس کی دوسری لہر آئی ہے یہ وباء مزید بڑھ سکتی ہے۔

امریکہ

مزید :

صفحہ اول -