آمدنی سے زائد اثاثہ جات‘پی ڈبلیو ڈی کاسابق انجینئر جسمانی ریمانڈ پر نیب کے حوالے

   آمدنی سے زائد اثاثہ جات‘پی ڈبلیو ڈی کاسابق انجینئر جسمانی ریمانڈ پر نیب ...

  

لاہور(نامہ نگار)احتساب عدالت کے ایڈمن جج جوادالحسن نے آمدنی سے زائد اثاثہ جات کیس میں ملوث پی ڈبلیو ڈی کے سابق انجینئر ملزم محمد رمضان 14 روزہ جسمانی ریمانڈ پر نیب کی تحویل میں دے دیاہے عدالت نے ملزم کو30 ستمبر کو دوبارہ عدالت میں پیش کرنے کا حکم دیا نیب پراسیکیوٹر عاصم ممتاز عدالت میں پیش ہوئے نیب کا موقف ہے کہ کروڑوں روپے کی جائیدادیں اور بینک بیلنس کے حامل پی ڈبلیو ڈی کے سابق انجینئر ملزم محمد رمضان کو گرفتار کیا گیاہے، ملزم کو غیرقانونی طور پر دوران سروس 20 کروڑ سے زائد مالیت کی جائیدادیں بنانے کے الزام میں گرفتار کیا گیا ملزم کیخلاف آمدن سے زائد اثاثہ جات کی شکایات پر نیب لاہور میں گزشتہ سال انکوائری کا آغاز ہوا  دوران انکوائری ملزم اور اہلخانہ کے نام موجود اثاثہ جات کی تفصیلات اکھٹی کی گئی تو حیران کن انکشافات کا سلسلہ شروع ہوا، دوران تحقیقات ملزم کے نام پر لاہور، جھنگ، ملتان و دیگر اضلاع میں 50 سے زائد پراپرٹیاں اور کاریں ہونے کا انکشاف ہوا، ملزم دوران سروس بدعنوانی میں ملوث ہونے کی وجہ سے 6 مرتبہ معطل بھی ہوا اگرچہ بعد ازاں بحال ہوتا رہا، ملزم کے خلاف ٹھوس شواہد کے حصول پر سابق سپرنٹنڈنگ انجینئر محمد رمضان کی گرفتاری عمل میں لائی گئی، ملزم پر لگائے گئے الزامات کے حوالے سے اسے صفائی اور ذرائع آمدن کی فراہمی کا بھرپور موقع فراہم کیا گیا تاہم ملزم مکمل طور پر ناکام رہاہے۔ 

مزید :

علاقائی -