عام آدمی کو ریلیف ملنے سے لوگوں کا پولیس اور حکومت پر اعتماد بحال ہوگا: محمد عمر شیخ 

    عام آدمی کو ریلیف ملنے سے لوگوں کا پولیس اور حکومت پر اعتماد بحال ہوگا: ...

  

  لا ہو ر (کر ائم رپو رٹر)سربراہ لاہور پولیس محمد عمر شیخ نے پولیس لائنز قلعہ گجر سنگھ میں آپریشن، انویسٹی گیشن، ٹریفک، ڈولفن، پیرو، انٹی رائٹ کے افسران کے مشترکہ اجلاس سے خطاب کیا، اجلاس میں ڈی آئی جی آپریشنز اشفاق احمد خان، ڈی آئی جی سیکیورٹی محبوب رشید، سی ٹی او لاہور سید حماد عابد، ایس ایس پی ایڈمن لیاقت علی ملک، ڈویژنل ایس پیز، ایس ڈی پی اوز، ایس ایچ اوز، انچارج انویسٹی گیشنز، ٹریفک و ڈولفن سمیت تمام افسران نے شرکت کی  اس موقعہ پر لاہور پولیس کے چاق و چوبند دستے نے سلامی کی، سی سی پی او لاہور نے یادگارشہداء پر پھول چڑھائے اور شہداء پولیس کیلئے فاتحہ خوانی کی افسران کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے سربراہ لاہور پولیس کا کہنا تھا کہ اب عام آدمی کو ریلیف ملنا چاہیے، عام آدمی کو ریلیف ملنے سے لوگوں کا پولیس اور حکومت پر اعتماد بحال ہوگا،  ریلیف کیلئے سب سے پہلے میرٹ پر تفتیش کرنا ہوگی، سی سی پی او لاہور کا کہنا تھا کہ انوسٹی گیشن آفیسرز کا کام میرٹ پر تفتیش کرنا ہے، انویسٹی گیشن ونگ میں سب سے زیادہ ذمہ داری ایس ڈی پی اوز کی ہے، انہوں نے افسران پر واضح کیا کہ تفتیش تبدیلی کی صورت میں پہلے ناقص تفتیش پر انوسٹی گیٹر کو سزا دی جائے، ایس ڈی پی اوز سپروائزری آفیسر، ناقص تفتیش پر نہیں بچیں گا  سی سی پی او لاہور عمر شیخ کا ایس ایچ اوز، انچارج انوسٹی گیشنز،ایس ڈی پی اوز اور ڈویژنل افسران کو عندیہ دیتے ہوئے کہا کہ آپ میرے بازوں ہیں،  کارکردگی دیکھانا ہوگی، ورنہ گھر جائیں گے محکمہ پولیس میں کالی بھیڑوں کے خلاف سخت  ایکشن لیا جارہا ہے، سی سی پی او لاہور نے  اجلاس کے دوران افسران کے سوالوں کے جوابات بھی دئیے،  سی سی پی او لاہور نے ایس پیز انوسٹی گیشن کی کارکردگی پر اظہار اطمینان کرتے ہوئے لوکیشن واٹس ایپ گروپ ختم کروا دیا۔

مزید :

علاقائی -