صحافی کالونی میں بڑھتی ہوئی وارداتوں سے شہری عدم تحفظ کا شکار 

صحافی کالونی میں بڑھتی ہوئی وارداتوں سے شہری عدم تحفظ کا شکار 

  

لاہور (کرائم رپورٹر)تھانہ ہربنس پورہ کے علاقہ صحافی کالونی میں چوری ڈکیتی اور راہزنی کی وارداتوں میں تشویشناک حد تک اضافہ ہو گیا ہے پچھلے کئی ماہ سے علاقے میں ڈاکوؤں اور چوروں کے گینگ متحرک ہیں اور انھوں نے علاقے میں اودھم مچایاہوا ہے  افسوسناک امر یہ ہے کہ پولیس نہ تو ان وارداتوں کے مقدمات درج کرتی ہے اور نہ ہی ان وارداتوں پر قابو پانے کے لیے ملزمان کو گرفتار کیا جاسکا ہے بتایا گیا ہے کہ تھانہ ہربنس پورہ کے علاقہ صحافی کالونی میں گذشتہ دو ماہ کے دوران چار درجن سے زائد چوری راہزنی کی وارداتیں ہو چکی ہیں چور دن دیہاڑے لوگوں کے گھروں کے باہر سے پانی والی موٹر یں،بجلی کے میٹر اور دیگر سامان چوری کر کے لے جاتے ہیں پولیس کو وقو عہ کی اطلاع دی جاتی ہے پولیس مقدمات درج کرنے کی بجائے ٹال مٹول کر کے متاثرین کو واپس بھجوا دیتی ہے صحافی کالونی میں موجود روزنامہ پاکستان کے فوٹو گرافر ناصر غنی نے بتایا ہے کہ پچھلے دنوں چور اس کے گھر کے باہر سے بجلی کا باکس اور مزدوروں کا پڑا سامان بھی  اٹھا کر لے گئے اسی طرح ای بلاک کے رہائشی ظہورالحسن کے گھر کے باہر سے موٹر چوری کر لی گیء صحافی کالونی میں ہی امجد کے گھر سے لاکھوں روپے مالیت کا سامان چوری کر لیا گیا، جاوید کی موٹر سائیکل جبکہ عرفان کا رکشہ بھی چوری ہوا ہے چھوٹے بچوں کی سائیکلیں اور کھلونے بھی چوری کر لیے جاتے ہیں صحافی کالونی میں پولیس چوکی موجود ہونے کے باوجود وارداتوں میں کمی نہیں لائی جاسکی صحافی کالونی کے رہائشی افراد نے وزیر اعلیٰ پنجاب اور آئی جی پولیس پنجاب سے مطالبہ کیا ہے کے علاقے میں پولیس کی گشت میں اضافہ کیا جائے اور کسی ایماندار چوکی انچارج کو تعینات کرکے ان وارداتوں کا خاتمہ ممکن بنایاجائے ورنہ وہ احتجاج کرنے پر مجبور ہو ں گے۔ 

مزید :

علاقائی -