میپکو‘ شجاع آبادبار میں کشیدگی‘ معاملہ سلجھانے کی کوششیں تیز

میپکو‘ شجاع آبادبار میں کشیدگی‘ معاملہ سلجھانے کی کوششیں تیز

  

شجاع آباد (نمائندہ خصوصی)میپکو شجاع آباد اور شجاع آباد بار کے درمیان جنگ بڑھ گئی‘ تھانہ سٹی میں بار کے وکلاء کے خلاف کراس ورشن درج ہونے پر شجاع آباد کے وکلاء نے اپنی گرفتاری کیلئے تھانہ چوک پہنچ کر پر امن احتجاج کیا اس موقع پر ایس ایچ او تھانہ سٹی نے موقع پر پہنچ کر وکلاء سے مذاکرات کئے واضح رہے کہ چندروز قبل شجاع آباد بار کا وکیل ایس ڈی او سب ڈویژن سکندر آباد کے پاس بلنگ کے سلسلے میں آفس آیا وہاں پر ایس ڈی او سے تکرار ہو گئی جس پر میپکو اہلکاروں (بقیہ نمبر39صفحہ 10پر)

نے وکیل کو یرغمال بنا کر کمرہ میں بند کر دیا تھا جس پر شجاع آبادبار کے وکلاء بھی واپڈا آفس پہنچ گئے جس پر واپڈا والوں نے واپڈا کا میں گیٹ بند کر دیا  وکلاء واپڈا کا گیٹ پھلانگ کر اندر داخل ہو کر وکیل کو کمرہ سے نکلوایا اور 15پر کال کرنے پر تھانہ سٹی پولیس موقع پر پہنچ گئی جس پر تھانہ سٹی پولیس نے وکلاء کی درخواست پر واپڈا کے اہلکاروں کے خلاف مقدمہ درج کر کے یونین کے اہلکار کو گرفتار کر کے حوالات بند کر دیا اور بعد ازاں واپڈا کی جانب سے استغاثہ پر تھانہ سٹی پولیس نے وکلاء کے خلاف بھی کراس ورشن مقدمہ درج کر لیا تھا  اس ضمن میں انتظامیہ کی جانب سے واپڈا اہلکاران اور بار کے وکلاء کے درمیان معاملہ کو سلجھانے کیلئے کوششیں جاری ہیں۔

کوششیں 

مزید :

ملتان صفحہ آخر -