علی پور: یوٹیلیٹی سٹورز سے چینی‘ آٹاغائب‘ بلیک میں فروخت کا انکشاف

   علی پور: یوٹیلیٹی سٹورز سے چینی‘ آٹاغائب‘ بلیک میں فروخت کا انکشاف

  

 ہیڈپنجند(نمائندہ پاکستان) علی پور کے یوٹیلیٹی سٹوروں پر چینی کا نام ونشان ختم ہوچکاہے۔ چین پر سبسڈی دینے کے حکومتی دعوے ریت کے دیوار ثابت ہوئے۔آٹا اوردیگر اشیاء خوردونوش بھی موجود نہ ہیں۔شہریوں نے بتایا کہ آٹا مہنگا ہونے کے ساتھ ساتھ آٹے کا (بقیہ نمبر21صفحہ 10پر)

بحران تاحال جاری ہے۔ بیرون ممالک سے گندم درآمد کرنے کے باوجود آٹے کابحران ختم نہ ہوسکا۔یوٹیلٹی سٹور کے ملازمین صبح سویرے نمائشی آٹا اورچینی سیل کیلئے قطاریں لگواکرکاروائی ڈال لیتے ہیں اوربعدمیں آٹا چینی کے ختم ہونے کا بہانہ بناکربلیک میں آٹااورچینی فروخت کرکے سارا دن عوام کو لوٹنے میں مصروف رہتے ہیں۔اس بابت یوٹیلٹی سٹور ملازمین سے کہا جائے تو جواب ملتاہے پتا سرکاری ریٹ پر ملنے والی چینی اورآٹاختم ہوگئے ہیں اب پرائیویٹ ریٹ پر خریدنا ہے توخریدوورنہ رش نہ کرو۔شہریوں غلام یٰسین سعیدی،عمیررضا، عبدالرحیم، محمدطارق، محمداکرم،ناظم علی، غلام عباس سمیت دیگر نے زیراعلیٰ پنجاب، ڈی سی مظفرگڑھ،اسسٹنٹ کمشنر علی پورواعلیٰ افسران سے مطالبہ کیا ہے علی پور کے تمام یوٹیلٹی سٹوروں پرآٹا،چینی ودیگر ضروری اشیاء خوردونوش کی فروخت یقینی بنایا جائے اور بداخلاق عملہ کے خلاف کاروائی کی جائے۔

غائب

مزید :

ملتان صفحہ آخر -