ضلع ملتان: چوری‘ ڈکیتی کی وارداتوں میں اضافہ‘ شہری خوفزدہ 

  ضلع ملتان: چوری‘ ڈکیتی کی وارداتوں میں اضافہ‘ شہری خوفزدہ 

  

 ملتان (وقا ئع نگار) ڈکیتی و چوری کی مختلف وارداتوں میں شہری موٹر سائیکل سمیت دیگر لاکھوں روپے مالیت کی نقدی و قیمتی سامان سے محروم ہوگئے ہیں۔ پولیس نے مقدمات درج کر کے ملزمان کی تلاش شروع کر دی ہے۔تفصیل کے مطابق تھانہ مظفر آباد کے علاقے نصیر (بقیہ نمبر22صفحہ 10پر)

والہ منیر احمد سے چار مسلح ڈاکو نے روک کر نقدی و موٹرسائیکل مالیت1لاکھ 16ہزار چھین کر فرار ہوگئے، تھانہ شاہ شمس کے علاقے قاسم پور نہر ابوبکر سے تین نامعلوم افراد نے اسلحہ کی نوک پر نقدی و سونا مالیت 55ہزار لیگئے، تھانہ گلگشت کے علاقے مین مارکیٹ کوثر پروین سے نامعلوم موٹرسائیکل سوار ملزم جھپٹا مارکر پرس جس میں نقدی و موبائل مالیت70ہزار موجود تھے چھین کر لیگیا، واپڈا دفتر موڑ محمد مہتاب اور اس اہلیہ سے تین افراد نے روک کر گن پوائنٹ پر نقدی و طلائی زیورات مالیت 7لاکھ10ہزار لیگئے، تھانہ سیتل ماڑی کے علاقے محمد سرفراز کی بیوی سے موٹرسائیکل سوار جھپٹا مارکر پرس جس میں نقدی و موبائل مالیت40ہزار موجود تھے چھین کر فرار ہوگیا، تھانہ صدر کے علاقے امین ٹاون محمد مدنی سے دومسلح ڈاکو نے اسلحہ کے زور پر نقدی و موبائل مالیت1لاکھ90ہزار لیگئے، تھانہ قادر پور راں کے علاقے غلام حیدر سے دو افراد نے گن پوائنٹ پر نقدی3لاکھ15ہزار لیگئے، تھانہ کینٹ کے علاقے نشتر ہسپتال سے محمد نعیم، کینٹ مسجد کے باہر سے شہزاد حسین، نواں شہر عمر دراز،تھانہ قطب پور کے علاقے فاروق پورہ کاشف علی کی موٹرسائیکلیں چوری ہوگئی، تھانہ چہلیک کے علاقے قدیر آباد عاقب محمود کے گھر سے دس تولہ سونا سمیت نقدی50ہزار، تھانہ ممتازآباد کے علاقے رام کلی محمد فہیم، خواجہ فرید ہسپتال رجب علی، تھانہ شاہ شمس کے علاقے کالونی یاسر مجید کی موٹرسائیکلیں، رنگیل پور شاہد بشیر کیگھر کا سوئی گیس میٹر، گردیزی مارکیٹ محمد عثمان کی والدہ سے نامعلوم خواتین نقدی و سونا مالیت3لاکھ، چاہ نیم والہ محمد اصغر،تھانہ کوتوالی کے علاقے محلہ سیالاں والا رجب علی، تھانہ سیتل ماڑی کے علاقے گرڈ سٹیشن محمد رمضان، کھاد فیکٹری محمد لیاقت، ماتم والی پلی محمد شاہد کی موٹرسائیکلیں، سمیجہ آباد ارشاد قمر کے گھر سے نقدی و طلائی زیورات مالیت5لاکھ8ہزار، تھانہ صدر کے علاقے بچ مبارک محمد ریاض،تھانہ لوہاری حمزہ مسعود خان کی موٹرسائیکلیں، محمد امر ممتاز کے گودام سے سامان مالیت5کڑوڑ76لاکھ9ہزار، تھانہ مخدوم رشید کے علاقے محمد شبیر کیگھر سے نقدی و سونا مالیت1لاکھ62ہزار، تھانہ بستی ملوک کے علاقے آصف کے گھر سے نقدی و طلائی زیورات مالیت18لاکھ46ہزارجبکہ تھانہ صدر شجاعباد کے علاقے محمد صادق کے سرکاری سکول سے سولر و بیٹیریاں مالیت3لاکھ چوری ہوگئے۔ ضلع ملتان میں چوری و ڈکیتی کی وارداتوں میں بے پناہ اضافے نے شہریوں کا جینا دوبھر کردیا۔لوگ دن دیہاڑے لوٹنے پر مجبور ہوگئے۔ تھانہ چہلیک کے علاقے میں مصروف ترین روڈ پر نامعلوم ڈاکو فارمیسی سے ہزاروں روپے لوٹ گئے۔ایس ایچ او چہلیک خاموش تماشائی بنا ہوا ہے۔معلوم ہوا ہے ضلع میں گزشتہ تقریبا ڈیڑھ سالوں میں خوری ڈکیتی کی وارداتوں میں ان گنت اضافہ ہوا ہے۔جسکی خاص وجہ ضلعی پولیس افسران کا غیر سنجیدہ رویہ ہے۔موجودہ سی پی او کی ملتان میں تعیناتی بھی پر کئی سوالیہ نشان لگ چکے ہیں۔ایس ایچ او بے لگام ہوگئے ہیں۔ کیونکہ وہ اپنی ایس ایچ او کھری اور پیسے کمانے کی طرف مکمل توجہ دے رہے ہیں یا پھر زمینوں  پر قبضے کرانے کا پلان بناتے رہتے ہیں۔شہری چوری ڈکیتی کی وارداتوں کی وجہ سے شدید پریشان ہوگئے ہیں۔اسیں طرح کا ایک واقعہ دو روز قبل تھانہ چہلیک کے علاقے میں پیش آیا ہے۔جہاں دن دیہاڑے نامعلوم مسلح ڈاکو چلڈرن ہسپتال کے بالمقابل فارمیسی میں گھسے۔اور وہاں آتے ہی اسلحہ کے زور پر ہزاروں روپے لوٹ کر فرار ہوگئے۔مقامی پولیس نے محمد ارباز کی دراخوست کو جمع کرلی۔مگر تاحال کوئی ملزم گرفتار نہیں کیا۔اپنہ روایتی انداز کو اپناتے ہوئے روز نئی پیشی دے دیتے ہیں۔متاثرہ شہری نے پولیس کے اعلی حکام سے مذکورہ صورت حال پر فوری نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔

وارداتیں 

مزید :

ملتان صفحہ آخر -