عینک پہننے والوں کے لیے خوشخبری، کورونا وائرس کے لیے اُنہیں نشانہ بنانا زیادہ مشکل ہے، سائنسدانوں نے انکشاف کردیا

عینک پہننے والوں کے لیے خوشخبری، کورونا وائرس کے لیے اُنہیں نشانہ بنانا ...
عینک پہننے والوں کے لیے خوشخبری، کورونا وائرس کے لیے اُنہیں نشانہ بنانا زیادہ مشکل ہے، سائنسدانوں نے انکشاف کردیا
کیپشن:    سورس:   creative commons license

  

بیجنگ(مانیٹرنگ ڈیسک) کورونا وائرس سے بچاﺅ کے لیے ماہرین فیس ماسک کی پابندی پر تو زور دیتے آ رہے تھے۔ اب انہوں نے عینک پہننے کے متعلق بھی نئی تحقیق میں ایک حیران کن انکشاف کر دیا ہے۔ میل آن لائن کے مطابق چینی ماہرین نے اپنی اس تحقیق میں بتایا ہے کہ جو لوگ باہر نکلتے وقت ہمیشہ عینک پہنے رکھتے ہیں، ان کو کورونا وائرس لاحق ہونے کا خطرہ دوسروں کی نسبت کئی گنا کم ہوتا ہے۔ اس تحقیق میں جو مردوخواتین دن میں آٹھ گھنٹے نظر کی عینک پہنتے تھے انہیں وائرس لاحق ہونے کا خطرہ 5.8فیصد کم پایا گیا۔

اس تحقیق میں نن چینگ یونیورسٹی کے ماہرین نے چینی صوبے ہیوبی میں ماہرین نے ہزاروں لوگوں کے چشمہ پہننے کی عادت اور ان کو وائرس لاحق ہونے کے امکان کا تجزیہ کرکے نتائج مرتب کیے ہیں۔رپورٹ کے مطابق کئی سابقہ تحقیقات میں بھی ثابت ہو چکا ہے کہ بیشتر لوگوں کو کورونا وائرس آنکھوں کے ذریعے لاحق ہوتا ہے۔ وائرس ان کی آنکھوں میں ہوا میں معلق لعاب کے قطروں سے یا ہاتھوں سے آنکھوں کو چھونے سے داخل ہوتا ہے۔ چنانچہ جن لوگوں نے عینک پہن رکھی ہو، وہ ان دونوں طریقوں سے آنکھوں میں وائرس داخل ہونے سے محفوظ رہتے ہیں۔ 

مزید :

کورونا وائرس -