الیکشن کمیشن نے فواد چوہدری اور اعظم سواتی کو نوٹس جاری کر دیئے، 14روز میں جواب طلب

الیکشن کمیشن نے فواد چوہدری اور اعظم سواتی کو نوٹس جاری کر دیئے، 14روز میں ...

  

 اسلام آباد(سٹاف رپورٹر) الیکشن کمیشن آف پاکستان نے وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری اور وفاقی وزیر ریلوے اعظم خان سواتی کو نوٹسز جاری کر دئیے۔تفصیلات کے مطابق وفاقی وزرا کی جانب سے قومی ادارے الیکشن کمیشن پر الزامات پر ای سی پی نے دونوں وفاقی وزرا سے14 روز میں جواب طلب کر لیا ہے۔ الیکشن کمیشن نے فواد چوہدری اور اعظم سواتی کو نوٹسز جاری کر کے ان سے لگائے گئے الزامات کے ثبوت مانگ لیے ہیں۔قبل ازیں  وفاقی وزرا کی جانب سے الزامات پر الیکشن کمیشن آف پاکستان میں اجلاس منعقد ہوا، جس میں الزامات پر مبنی پیمرا کی جانب سے بھجوائے گئے ویڈیو کلپس کا جائزہ لیا گیا۔سپیشل سیکریٹری الیکشن کمیشن کی زیر صدارت اجلاس میں ویڈیو کلپس کے جائزے کے بعد فواد چوہدری اور اعظم سواتی کو نوٹسز جاری کیے گئے، ان نوٹسز میں الیکشن کمیشن پر لگائے گئے الزامات پر جواب طلب کیا گیا ہے۔یاد رہے کہ مذکورہ وفاقی وزرا سے الزامات کے ثبوت مانگنے کا فیصلہ منگل کے روز چیف الیکشن کمشنر سکندر سلطان راجہ کی سربراہی میں ہونے والے الیکشن کمیشن کے اجلاس میں کیا گیا تھا۔آئینی ماہرین کا کہنا ہے کہ اگر وزرا ثبوت فراہم کرنے میں ناکام رہے تو پھر الیکشن کمیشن کے پاس ان کے خلاف توہین عدالت کی کارروائی کرنے کا اختیار حاصل ہے۔واضح رہے کہ الیکشن کمیشن اور وفاقی حکومت کے درمیان اختلاف کی سب سے بڑی وجہ آئندہ انتخابات میں الیکٹرانک ووٹنگ مشین (ای وی ایم) کے استعمال کا معاملہ ہے۔ الیکشن کمیشن نے عام انتخابات کے لیے اس ووٹنگ مشین کے استعمال پر اپنے تحفظات کا اظہار کیا ہے، ای سی پی کا مؤقف ہے کہ ای وی ایم کے استعمال سے بھی الیکشن شفاف ہونے کی کوئی ضمانت نہیں دی جا سکتی، کیوں کہ اس مشین کے سافٹ وئیر میں کسی بھی وقت تبدیلی لائی جا سکتی ہے۔ 

نوٹس جاری

مزید :

صفحہ اول -