کسی بھی شکل میں جانبداری کا مظاہرہ نہیں ہونا چاہئیے وایر اعظم کی ورزاءکو ہدائیت

کسی بھی شکل میں جانبداری کا مظاہرہ نہیں ہونا چاہئیے وایر اعظم کی ورزاءکو ...

  

                             اسلام آباد(ثناءنیوز) وزیر اعظم جسٹس (ر) میر ہزار خان کھوسو نے وفاقی وزراءکو ہدایت کی ہے کہ وہ کسی سیاسی جماعت کی مدد اور حمایت کا تاثر بھی پیدا نہ ہونے دیں ۔ کسی بھی شکل میں جانبداری کا مظاہرہ نہیں ہونا چاہیے ۔ سیاسی جماعتوں کے معاملات سے تمام وزراء خود کو الگ تھلگ رکھیں۔ نگران وزیراعظم میرہزارخان کھوسو کی زیر صدارت وفاقی کابینہ کا اجلاس بدھ کو اسلام آباد میں ہوا۔وفاقی کابینہ کے اجلاس میں امن وامان سے متعلق معاملات پرغور ہوا۔اجلاس میں بلوچستان اور پشاور بم دھماکوں اور کل کے زلزلے میں جاں بحق ہونے والوں کے لئے فاتحہ خوانی کی گئی ۔وفاقی کابینہ نے تمام سیاسی رہنماو¿ں کی سیکورٹی بڑھانے کی ہدایت کر دی ہے ۔امن امان کی صورتحال میں بہتری کے لئے صوبوں کو تمام ضروری معاونت کی فراہمی کا فیصلہ بھی کیا گیا ہے ۔ کابینہ نے الیکشن کمیشن کو ہر ضروری مدد فراہم کرنے کا فیصلہ بھی کیا ہے اور انتخابی عمل کے حوالے سے ممکنہ منفی عوامل کے سدباب کے لئے الیکشن کمیشن کی ہدایت پر اس کی روح کے مطابق عملدرامد کا عزم کیا ہے ۔وزیر اعظم جسٹس (ر) میر ہزار خان کھوسو نے پوری قوم کو یقین دہانی کروائی ہے کہ ملک میں حالات کو بہتر بنانے کے لئے مخلصانہ کوششیں کی جارہی ہیں انھوں کہا کہ صاف شفاف انتخابات کا انعقاد ہی ہماری بنیادی آئینی ذ مہ داری ہے ۔ الیکشن کمیشن کی اس بارے بھر پور معاونت کے حوالے سے ہمارے کندھوں پر بھاری ذ مہ داری عائد ہے ۔. وزیر اعظم نے اس عزم کا اعادہ کیا کہ بغیر کسی سیاسی وابستگی کے انتخابی عمل کے لئے معاونت فراہم کی جائے گی تاکہ ملک میں منصفانہ اور غیر جانبدارانہ انتخابات کا انعقاد یقینی بنا یا جاسکے ۔انھوں نے کہا ہمیں کسی بھی شکل میں جانبداری کا مظاہرہ نہیں کرنا چاہیے ۔ سیاسی جماعتوں کے معاملات سے تمام وزراء خود کو الگ تھلگ رکھیں ۔ اس ضمن میں احتیاط کا دامن ہاتھ سے نہ چھوڑیں ۔وزیر اعظم نے کہا کہ وہ تمام سیاسی جماعتوں سے رابطوں کی کوشش کررہے ہیں تاکہ سازگار انتخابی ما حول کے لئے انھیں اعتماد میں لیا جاسکے سازگار انتخابی ما حول فراہم کرنا نگران حکومت کا اصل مینڈیٹ ہے ۔ انھوں نے کہا کہ انتخابات پرامن انعقاد تک حکومت سازگار انتخابی ما حول بارے مو¿ثر اقدامات کا سلسلہ جاری رکھے گی ۔نگران وزیر اعظم میر ہزار خان کھوسو نے کہا نگران حکومت کا یک نکاتی مینڈیٹ انتخابات کرانا ہے۔تمام سیاسی جماعتوں سے رابطے کررہے ہیں۔ ہماری جانبداری پر کسی قسم کا سوال نہیں اٹھنا چاہیے۔ پشاور اور بلوچستان میں دہشت گردی کے حالیہ واقعات قابل مذمت ہیں۔ اس موقع پر وزیر اعظم نے صوبائی حکومتوں کو ہدایت کی کہ وہ کسی بھی مشکوک سرگرمی پر نظر رکھیں۔ دہشت گردی سے نمٹنے کے لیے میکنزم تیار کیا جارہا ہے۔وزیر اعظم نے صوبائی حکومتوں کو ہدایت کی کہ سیاسی جماعتوں کی انتخابی سرگرمیوں کو نشانہ بنانے ملزمان جلد از جلد انصاف کے کٹہرے میں لایا جائے انھوں نے غمزدہ خاندانوں سے اظہار ہمدردی کیا ہے۔

وزیراعظم وزراءہدایت

مزید :

صفحہ اول -