شیڈو کابینہ کیخلاف درخواست مسترد ، پارلیمانی تنازعات عدالتوں میں نہیں اٹھائے جا سکتے : ہائیکورٹ

شیڈو کابینہ کیخلاف درخواست مسترد ، پارلیمانی تنازعات عدالتوں میں نہیں ...

  

لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہور ہائیکورٹ نے پنجاب اور وفاق میں شیڈو کابینہ کی تشکیل دینے کی درخواست مسترد کرتے ہوئے قرار دیا کہ پارلیمانی تنازعات عدالتوں میں نہیں اٹھائے جا سکتے، اس کے لئے آئین میں ترمیم ضروری ہے۔جسٹس عاطر محمود نے معروف قانون دان اے کے ڈوگر ایڈووکیٹ کی درخواست پر محفوظ فیصلہ جاری کرتے ہوئے یہ ریمارکس دیئے ہیں ،عدالت نے اپنے مختصر فیصلے میں کہا ہے کہ شیڈو کابینہ کی تشکیل کا مسئلہ عدالتوں میں نہیں پارلیمنٹ میں حل ہونا چاہیے ، پارلیمانی تنازعات عدالتوں میں نہیں اٹھائے جا سکتے، اس کے لئے آئین میں ترمیم کی ضرورت ہے جو صرف پارلیمنٹ کا صوابدیدی اختیار ہے، فیصلے میں کہا گیا ہے کہ عدالتیں قانون میں ترمیم کا حکم دے سکتی ہیں لیکن آئین میں ترمیم کا حکم نہیں دے سکتیں، صوبائی اور وفاقی سطح پر اسمبلیوں میں سٹینڈنگ کمیٹیاں کام کر رہی ہیں، اس لئے شیڈو کابینہ قائم کرنے کی ضرورت نہیں ہے، درخواست گزار نے موقف اختیار کیا تھا کہ پنجاب اور وفاق میں حکومت کی کارکردگی پر چیک اینڈ بیلنس رکھنے کے لئے شیڈو کابینہ تشکیل دینے کا حکم دیا جائے۔

ہائیکورٹ

مزید :

صفحہ آخر -