ایم این اے جمشید دستی کوفنڈز فراہم نہ کرنیکی درخواست خارج ہونے کیخلاف اپیل پر ڈپٹی اٹارنی جنرل پاکستان اور ایڈیشنل ایڈوکیٹ جنرل پنجاب کو10مئی تک پیش ہونیکا حکم

ایم این اے جمشید دستی کوفنڈز فراہم نہ کرنیکی درخواست خارج ہونے کیخلاف اپیل ...

  

ملتان (خبر نگار خصوصی) ہائیکورٹ ملتان بینچ کے ڈویڑن بینچ نے ایم این اے جمشید دستی کوفنڈز فراہم نہ کرنے کی درخواست خارج ہونے کے خلاف اپیل پر ڈپٹی اٹارنی جنرل (بقیہ نمبر26صفحہ12پر )

پاکستان اور ایڈیشنل ایڈوکیٹ جنرل پنجاب کو جواب لے کر معاونت کے لئے10 مئی کو پیش ہونے کا حکم دیاہے۔فاضل عدالت میں ممبرقومی اسمبلی جمشیداحمددستی نے وکیل عامر اقبال بھٹہ کے ذریعے انٹراکورٹ اپیل دائر کی تھی کہ وہ حلقہ این اے 178 سیممبرقومی اسمبلی منتخب ہواجس کی آبادی 60 لاکھ ہے۔ مذکورہ حلقے کے لئے حکومت پاکستان اورپنجاب کی جانب سے حلقہ میں ترقیاتی کام کرائے جارہے ہیں جس کے لئے کمشنر ڈی جی خان اورڈپٹی کمشنر مظفرگڑھ کی جانب سے 15 اپریل کو ٹینڈربھی طلب کرلئے گئے ہیں جبکہ دیگر تمام حلقوں میں حکومتی جماعت سے تعلق رکھنے والے ممبران کے ذریعے مذکورہ ترقیاتی سکیمیں مکمل کرائی جارہی ہیں اورانھیں فنڈزجاری کئے گئے ہیں لیکن درخواست گذارکو امتیازی سلوک کانشانہ بنایاگیا ہے جس پر مذکورہ افسران سے رابطہ کیاتو بتاگیا کہ حکومت کی جانب سے درخواست گذارکو فنڈز فراہم کرنے سے روکاگیا ہے نیز درخواست گذارکی دی گئی سکیموں کو بھی منظورکرنے سے انکارکردیاگیاہے جس پر فاضل عدالت کے سنگل بینچ سے رجوع کیا گیا تو 12 اپریل کو ابتدائی سماعت میں ہی درخواست خارج کردی گئی ہے کہ اس معاملہ میں حلقہ کے لوگوں کے بنیادی حقوق متاثرنہیں ہوئے ہیں اوریہ پالیسی میٹرہے جس میں عدالت مداخلت نہیں کرسکتی ہے جبکہ باقی حلقوں میں ممبران کی دی گئی سکیموں پر عمل کیاجارہاہے اس طرح یہ حلقہ کے لوگوں کے حقو ق متاثر کئے گئے ہیں اس لئے درخواست خارج کرنے کامذکورہ حکم منسوخ کرنے اورٹینڈرپر کارروائی روکنے کا حکم دیاجائے۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -