ہائیکورٹ ملتان بنچ نے میپکو کو لیٹ پیمنٹ چارجز کی وصولی سے روک دیا‘ قانونی جواز پیش کرنیکی ہدایت

ہائیکورٹ ملتان بنچ نے میپکو کو لیٹ پیمنٹ چارجز کی وصولی سے روک دیا‘ قانونی ...

  

ملتان (خبر نگار خصوصی) ہائیکورٹ ملتان بینچ نے میپکو کولیٹ پیمنٹ چارجز کی وصولی سے روکتے ہوئے وصولی کا قانونی جواز(بقیہ نمبر47صفحہ7پر )

پیش کرنے کی ہدایت کی ہے۔فاضل عدالت نے نیپرااورحکومت پاکستان کے وکلاء کو بھی آج 18 اپریل کو معاونت کے لئے طلب کرلیاہے۔فاضل عدالت میں مقامی ٹیکسٹائل ملزملتان کے جنرل مینیجرایڈمن نجیب اللہ خان نے درخواست دائر کی تھی کہ نیپراکی جانب سے میپکو کے کنزیومرسروس مینوئل کی منظوری دی گئی ہے جس کے تحت میپکو کوکولیٹ پیمنٹ چارجز (ایل پی ایس)وصول کرنے کا اختیاردیا گیا ہے اورمیپکویہ چارجز کل بل کے 10 فیصدکے حساب سے وصول کررہاہے۔تاہم قانون کیتحت نیپراکو ایساکوئی اختیارحاصل نہیں ہے اوراعلیٰ عدالتوں نے بھی کئی مقدمات میں قراردیاہے کہ نیپراکو صرف بجلی کے نرخ اورٹیرف مقررکرنے کا اختیارحاصل ہے اوردیگر کسی معاملہ میں مداخلت نہیں کرسکتی ہے اس لئے نیپراکا یہ اقدام خلاف قانون ہے اس کے علاوہ قانون کے تحت میپکو کو بل ادائیگی کی آخری تاریخ سے کم ازکم 7 روز قبل صارف کو پہنچاناہے جس کے بعد ایل پی ایس وصول کیاجاسکتاہے لیکن اگر بل 7 روز قبل نہیں دیاجاتا ہے توایل پی ایس کا نفاز 7 روز بعد ہوگالیکن اس سیقبل ایل پی ایس کی وصولی کی جارہی ہے اس لئے مذکورہ اختیاراورچارجز کا نفاز غیر قانونی قراردے کر منسوخ کیاجائے۔

لیٹ پیمنٹ چارجز

مزید :

ملتان صفحہ آخر -