تعلیم یافتہ قوم ہی موجودہ چیلنجز سے بطریق احسن عہدہ برا ہو سکتی ہے :ڈی ای او

تعلیم یافتہ قوم ہی موجودہ چیلنجز سے بطریق احسن عہدہ برا ہو سکتی ہے :ڈی ای او

  

چارسدہ (بیورو رپورٹ) ڈسٹرکٹ ایجو کیشن آفیسر سراج محمد نے کہا ہے کہ سکولوں سے باہر قابل ادخال بچوں کو داخل کرانا ہم سب کی مشترکہ ذمہ داری ہے اور ہماری اوپر قوم کا یہ ایک حق بھی ہے ۔ ایک تعلیم یافتہ قوم ہی موجودہ دور کے چلینجز کا بطریقہ احسن مقابلہ کر سکتی ہے ۔ سکولوں میں جسمانی سزا سے گریز کیا جائے اور بچوں کی اصلاح اور تربیت کیلئے نفسیات کے جدید طریقے اپنائے جائیں۔ پچھلے سال جن بچوں نے تعلیم ادھوری چھوڑی ہے پی ٹی سی ممبران اور عوامی منتخب نمائندے ان کے والدین سے ملاقات کریں تاکہ ان کو دوبارہ سکول میں داخل کیا جائے ۔ ان خیا لات کا اظہا ر انہوں نے گورنمنٹ گڑھی حمید گل میں ضلع کے تمام ہائی اور ہائیر سیکنڈری سکولوں کے سربراہان کے منعقدہ اجلاس سے خطاب کر تے ہوئے کی ہے ۔ ڈی ای او سراج محمد نے تمام سربرا ہان کو ہدایت کی کہ نئے تعلیمی سال کیلئے تقسیم کار میں متعلقہ استاد اور مضمون کا خاص خیال رکھاجائے ۔ ہر بچے کو مفت درسی کتب کی فراہمی یقینی بنائی جائے ۔ انرولمنٹ کے حوالے سے انہوں نے تمام تعلیمی اداروں کے سر براہان کو ہدایت کی کہ پچھلے سال جن بچوں نے تعلیم ادھوری چھوڑی ہے ۔ پی ٹی سی ممبران اور عوامی منتخب نمائندوں کے وساطت سے ان کے والدین سے ملاقات کی جائے اور انہیں سکول میں دوبارہ داخل کرنے کی ہر ممکن کو شش کی جائے ۔ انہوں نے تمام سر براہان پر زور دیا کہ سکول جانے کے قابل بچوں کو سکول میں داخل کروانے کیلئے تمام کو ششیں بروئے کار لائیں جائیں ۔انہوں نے واضح کیا کہ اساتذہ کی غیر حاضری کو بر داشت نہیں کیا جائیگا۔ کوالٹی ایجو کیشن کو یقینی بنانے کیلئے سکیم آف سٹڈیز پر پورا پوار عمل کیا جائے ۔ پی ٹی سی فنڈز کے شفاف استعمال کو یقینی بنایا جائے ۔ انہوں نے سکولوں میں جسمانی کے روک تھام پر زور دیا اور کہا کہ سکولوں میں جسمانی سزا سے گریز کیا جائے اور بچوں کی اصلاح اور تربیت کیلئے نفسیات کے جدید طریقے اپنائے جائیں ۔ انہوں نے مزید کہاکہ کہ سکولوں سے باہر قابل ادخال بچوں کو داخل کرانا ہم سب کی مشترکہ ذمہ داری ہے اور ہماری اوپر قوم کا یہ ایک حق بھی ہے ۔ ایک تعلیم یافتہ قوم ہی موجودہ دور کے چلینجز کا بطریقہ احسن مقابلہ کر سکتی ہے ۔ سکولوں میں جسمانی سزا سے گریز کیا جائے اور بچوں کی اصلاح اور تربیت کیلئے نفسیات کے جدید طریقے اپنائے جائیں۔ پچھلے سال جن بچوں نے تعلیم ادھوری چھوڑی ہے پی ٹی سی ممبران اور عوامی منتخب نمائندے ان کے والدین سے ملاقات کریں تاکہ ان کو دوبارہ سکول میں داخل کیا جائے

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -