پاکستان میری ٹائم میوزیم میں ڈبلیو ڈبلیو ایف نیچر کارنیوال کا انعقاد

پاکستان میری ٹائم میوزیم میں ڈبلیو ڈبلیو ایف نیچر کارنیوال کا انعقاد

  

کراچی (اسٹاف رپورٹر) دنیا کی صف اول کی فوڈ پروسیسنگ اور پیکیجنگ کمپنی ٹیٹرا پیک کے تعاون سے سالانہ ڈبلیو ڈبلیو ایف نیچر کارنیوال پاکستان میری ٹائم میوزیم میں منعقد ہوا جہاں ہزاروں افراد اس رنگ برنگے اور معلوماتی پروگرام میں شریک ہوئے۔ اس پروگرام کا مقصد یہ ہے کہ سول سوسائٹی اور اسکول جانے والے بچوں میں ماحولیاتی آگہی کو فروغ دیا جائے۔ اس پروگرام میں سرکاری و نجی اسکول مختلف سرگرمیوں میں باقاعدگی سے حصہ لیتے ہیں۔ کارنیوال میں ٹیٹرا پیک کا اسٹینڈ 'سبز عزم ' کے موضوع سے منظر پیش کررہا تھا جہاں طالب علموں اور ان کے گھر والوں سے اپیل کی جارہی تھی کہ وہ اپنی روز مرہ زندگی میں چھوٹے چھوٹے کاموں کے ذریعے بہتر ماحول لانے کے لئے وعدہ کریں۔ ٹیٹرا پیک کے اسٹینڈ پر ری سائیکلنگ پارٹنر گرین ارتھ ری سائیکلنگ کے کے اشتراک سے استعمال شدہ مشروبات کے ڈبوں (یو بی سیز )کو ری سائیکل کرکے مختلف اقسام کا فرنیچر تیار کرکے پیش کیا گیا ۔ اس موقع پر ری سائیکلنگ بہتر مستقبل کے عنوان سے ایک ڈاکومنٹری بھی دکھائی گئی جس میں بتایا گیا کہ کس طرح سے پاکستان میں دودھ اور جوس کے خالی ڈبوں کو جمع کرکے انہیں ری سائیکل کیا جاتا ہے۔ اس موقع پر شرکاء کو سبز عہد کرنے کے بعد خوبصورت پنز پیش کی گئیں۔ اس موقع پر ٹیٹرا پیک پاکستان کے انوائرمنٹ منیجر جاوید احمد نے بتایا، " پاکستان اور دنیا بھر کے صارفین استعمال شدہ ڈبوں کی ری سائیکلنگ کو سب سے اہم ماحولیاتی سرگرمی قرار دیتے ہیں اور ہمارے صارفین استعمال شدہ مصنوعات سے پہنچنے والے فائدے کو نمایاں برتری کے طور پر دیکھتے ہیں۔ اس میں کوئی حیرانی کی بات نہیں کہ ایسے پلیٹ فارمز سے ہمیں طالب علموں اور گھرانوں میں ری سائیکلنگ کی بھرپور اہمیت پیدا کرنے میں مدد ملتی ہے۔ "اس موقع پر سینئر ڈائریکٹر پروگرامز رب نواز نے کہا، نیچر کارنیوال آگہی پھیلانے والی تقریب ہے جو پاکستان بھر کے بڑے اسکولوں کا لازمی حصہ بن چکا ہے۔ رب نواز نے مزید کہا، "اس کارنیوال کا مقصد یہ ہے کہ عوام کے رجحانات کو تبدیل کیا جائے تاکہ وہ بہتر مستقبل کے لئے ماحول دوست بنیں۔ یہ کارنیوال ملک بھر کے افراد کی سوچ میں واضح تبدیلی لایا ہے جس کی عکاسی طالب علموں کی کاوشوں اور ان کے ماحولیاتی تصورات سمجھنے سے ہوتی ہے۔ "انہوں نے اپیل کی کہ نوجوانوں میں ماحولیاتی آگہی کو پھیلانا وقت کی اہم ضرورت ہے اور اس ضمن میں ٹھوس کاوشوں کی ضرورت ہے۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -