روس کا آواز سے 8 گنا زیادہ رفتار والے میزائل کا تجربہ، راڈار پر نظر نہیں آتا

روس کا آواز سے 8 گنا زیادہ رفتار والے میزائل کا تجربہ، راڈار پر نظر نہیں آتا
روس کا آواز سے 8 گنا زیادہ رفتار والے میزائل کا تجربہ، راڈار پر نظر نہیں آتا

  

ماسکو (اے پی پی) روس نے زرکون نامی ہائپر سونیک میزائل کا تجربہ کیا ہے جس کی رفتار آواز سے آٹھ گنا زیادہ ہے۔ارنا کی رپورٹ کے مطابق روسی وزارت دفاع نے اعلان کیا ہے کہ زرکون نامی جس ہائپر سونیک میزائل کا تجربہ کیا گیا ہے وہ بحری جنگی جہازوں کو تباہ کرنے کے لئے ڈیزائن کیا گیا ہے۔

سینٹ پیٹرز برگ میٹرو دھماکہ، حملے کا ماسٹر مائنڈ پکڑا گیا

بیان میں اس بات کا ذکر نہیں کیا کہ اس میزائل کا کب اور کس مقام پر تجربہ کیا گیا۔یہ میزائل، بحری کروز میزائل کی سیریز ہے اور راڈار پر نظرنہیںآتا ہے۔یہ میزائل اپنے ہدف کو چار سو کلومیٹر کے فاصلے سے تباہ کر سکتا ہے جبکہ آٹھ سو کلومیٹر کے فاصلے تک مار کرنے کے لئے اپنی توانائی بڑھا سکتا ہے۔زرکون میزائل کے تجربات مکمل ہونے کے بعد اسے بعض ایٹمی آبدوزوں اور روس کے جدید ترین بحری جنگی جہازوں پر نصب کیا جائے گا۔

مزید :

بین الاقوامی -