تاریخ میں پہلی مرتبہ چینی فوج نے ایک ایسے ملک کے ساتھ فوجی مشقوں کا اعلان کردیا کہ بھارت کے واقعی ہوش اُڑگئے، دونوں طرف سے گِھر گیا

تاریخ میں پہلی مرتبہ چینی فوج نے ایک ایسے ملک کے ساتھ فوجی مشقوں کا اعلان ...
تاریخ میں پہلی مرتبہ چینی فوج نے ایک ایسے ملک کے ساتھ فوجی مشقوں کا اعلان کردیا کہ بھارت کے واقعی ہوش اُڑگئے، دونوں طرف سے گِھر گیا

  

کٹھمنڈو(مانیٹرنگ ڈیسک) خطے میں اجارہ داری کے خواب دیکھنے والے بھارت نے دیگر ہمسایوں کی طرح نیپال کو بھی دہائیوں سے یرغمال بنا رکھا ہے اور اس کے ’آئین سازی‘ جیسے انتہائی ذاتی معاملات میں بھی دخل اندازی سے گریز نہیں کرتا۔ بھارت کی اسی دھونس سے تنگ آ کر نیپال نے دوسرے ہمسائے چین کی طرف رجوع کر لیا ہے اور اب چین اور نیپال مل کر تاریخ میں پہلی بار ایسا کام کرنے جا رہے ہیں کہ بھارت کے ہوش اڑ گئے ہیں۔ویب سائٹ سپیس وار کی رپورٹ کے مطابق چین اور نیپال پہلی بار مشترکہ جنگی مشقیں کرنے جا رہے ہیں جواتوار سے شروع ہو ں گی۔

جنگ کا خطرہ شدید ترین ہوگیا، وہ ملک جس کی سرحد پر روس نے اپنے جدید ترین میزائل پہنچادئیے، یہ کوئی عرب ملک نہیں بلکہ۔۔۔

رپورٹ کے مطابق دونوں ملکوں کی مشترکہ فوجی مشقیں کٹھمنڈو میں ہوں گی جن کا نام نیپال کے پہاڑ ماﺅنٹ ایورسٹ کے نام پر’ساگرماتھا فرینڈشپ2017ئ‘ رکھا گیا ہے۔ گزشتہ ماہ چینی وزیردفاع نے 15سال بعد نیپال کا دورہ کیا جس میں نیپالی حکام سے ملاقاتوں کے دوران ان مشقوں کے انعقاد پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ بھارت دہائیوں کی کوششوں کے باوجود ہمسایوں پر غلبہ پانے کی کوششوں میں کامیاب نہیں ہو سکا لیکن چین کی پہلی ہی کوشش نے اس کے سارے خواب چکناچور کر دیئے ہیں۔نیپال چاروں طرف سے زمین میں گھرا ہونے کے باعث ہر طرح کی تجارت کے لیے بھارت کا مرہون منت ہے اور بھارت اس کی اسی کمزوری کا فائدہ اٹھاتا آ رہا ہے۔ تاہم اب نیپالی حکومت بھارتی عذاب سے جان چھڑانے کے لیے چین کی طرف جھک رہی ہے۔

مزید :

بین الاقوامی -