ہائیکورٹ نے دارالامان میں پنا ہ لینے والی بیوی کو قتل کرنے والے شوہرمعاف علی کی سزائے موت کنفرم کردی

ہائیکورٹ نے دارالامان میں پنا ہ لینے والی بیوی کو قتل کرنے والے شوہرمعاف علی ...
ہائیکورٹ نے دارالامان میں پنا ہ لینے والی بیوی کو قتل کرنے والے شوہرمعاف علی کی سزائے موت کنفرم کردی

  

لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہورہائیکورٹ نے دارالامان میں پنا ہ لینے والی بیوی کو قتل کرنے والے شوہرمعاف علی کی اپیل مسترد کرتے ہوئے اسے ٹرائل کورٹ سے ملنے والی سزائے موت برقرار رکھی ۔

ہائیکورٹ نے مال روڈ پر احتجاجی مظاہروں پرپابندی کا ازسرے نو حکم جاری کردیا

فاضل بنچ نے مجرم معاف علی کونسدادہشت گردی کی عدالت سے ملنے والی موت کی سزا کنفرم بھی کردی ہے ۔ڈپٹی پبلک پراسیکیوٹر طارق جاوید نے عدالت کوبتایا کہ مجرم معاف علی کی بیوی نعیمہ بی بی نے اپنے شوہر کے خلاف تنسیخ نکاح کا دعویٰ کیاجس پر سول کورٹ نے نعیمہ بی بی کواس کے تحفظ کے لئے اسے دارالامان بھجوادیا،مجرم معاف علی نے تنسیخ نکاح کا دعویٰ کرنے کی رنجش پردارلامان جاکر اپنی بیوی نعیمہ بی بی کو قتل کردیاجس کا مقدمہ تھانہ سول لائن ضلع گجرات نے24جنوری2014 ءکودرج کیا، انسدادہشت گردی کی عدالت گوجرانوالہ نے3 جنوری2015 کو پولیس تفتیش ،چشم دید گواہوں کے بیانات ، میڈیکل رپورٹ اورفریقین کے وکلاءکے دلائل سننے کے بعد مجرم کو سزائے موت سنائی۔ وکیل صفائی نے موقف اختیارکیا کہ خاندانی رنجش کی بناءپر سسر نے قتل کے مقدمے میں ملوث کیا۔انسدادہشت گردی کی عدالت نے ناکافی شواہد کے باوجود سزائے موت سنائی۔ وکیل صفائی نے دلائل دیتے ہوئے عدالت سے استدعا کی کہ انسدادہشت گردی کورٹ کے مجرم کو سزائے موت دینے کے فیصلے کو کالعدم قراردیاجائے۔عدالت نے فریقین کا موقف سننے کے بعد اپیل خارج جبکہ سزائے موت کی کنفرمیشن کے لئے انسداد دہشت گردی کی عدالت کی طرف سے بھیجا گیا ریفرنس منظور کرلیا۔

مزید :

لاہور -