ہائی کورٹ نے گجرات پولیس کی زیرحراست اہلکار آغا رمیض کومبینہ پولیس مقابلے میں ہلاک نہ کرنے کا حکم دے دیا

ہائی کورٹ نے گجرات پولیس کی زیرحراست اہلکار آغا رمیض کومبینہ پولیس مقابلے ...
ہائی کورٹ نے گجرات پولیس کی زیرحراست اہلکار آغا رمیض کومبینہ پولیس مقابلے میں ہلاک نہ کرنے کا حکم دے دیا

  

لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہور ہائیکورٹ نے گجرات پولیس کی زیرحراست اہلکار آغا رمیض کومبینہ پولیس مقابلے میں ہلاک نہ کرنے کا حکم دے دیا۔

ہائیکورٹ نے مال روڈ پر احتجاجی مظاہروں پرپابندی کا ازسرے نو حکم جاری کردیا

یہ حکم جسٹس ارم سجاد گل نے رفعت نصیر کی درخواست پرجاری کیا ۔ درخواست گزار کے وکیل سیدزاہد حسین بخاری نے موقف اختیار کیا کہ گجرات پولیس کرپشن سکینڈل بے نقاب کرنے پردرخواست گزار کے بیٹے رمیض کو گرفتارکرلیا ہے۔ تھانہ ڈنگہ پولیس پولیس اس کے موکل کو وعدہ معاف گواہ بننے سے روکنے کے لئے دباﺅ ڈال رہی ہے ۔انہوں نے بتایا کہ وعدہ معاف گواہ بننے پرڈنگہ پولیس اہلکاروں نے اعلی پولیس افسران کی ایماءپر آغا رمیض کوجسمانی ریمانڈ کے باوجودحوالات سے ہی لاپتہ کر دیا۔انہوں نے خدشہ ظاہر کیا کہ مقامی پولیس اسے مبینہ پولیس مقابلے میں مارنے کا ارادہ رکھتی ہے۔انہوں نے عدالت سے استدعا کی کہ ملزم کو جان کا تحفظ فراہم کرتے ہوئے اسے بازیاب کرنے کاحکم دے جس پر عدالت نے گرفتار پولیس اہلکار نوجوان آغا رمیض کی جان کے تحفظ کو یقینی بنانے کا حکم دیتے ہوئے آر پی او گوجرانوالہ ڈویزن سے 28مئی کو جواب طلب کرلیا،عدالتی سماعت کے بعد پولیس حراست میں نوجوان رمیض کی بہنیں اور بیٹیاں احاطہ عدالت میں روتی رہیں۔

مزید :

لاہور -