چین کی مجموعی ملکی پیداوار کی شرح 6.8فیصد ہو گئی

چین کی مجموعی ملکی پیداوار کی شرح 6.8فیصد ہو گئی

بیجنگ (آئی این پی/شِنہوا)رواں سال کی پہلی سہ ماہی میں 6.8فیصد شرح نمو کے ساتھ چین کی معیشت میں رواں سال ٹھوس آغاز کیا ہے،2018کے پہلے تین مہینوں میں مجموعی ملکی پیداوار 19.88ٹریلین یوآن(قربیا 3.2ٹریلین امریکی ڈالر)ہو گئی جو کہ موازنہ قیمتوں کے مقابلے میں 6.8فیصد سالانہ کا اضافہ ہے،قومی شماریات بیورو(این بی ایس)کے مطابق گزشتہ سہ ماہی کے مقابلے میں رواں شرح نمو میں کوئی تبدیلی نہیں ہوئی ہے،این بی ایس کے ترجمان شنگ جائیہوم میں ایک پریس کانفرنس میں بتایا کہ معیشت کا آغاز اچھا ہوا ہے۔

،انہوں نے کہا کہ یہ اضافہ ترقی کی ٹھوس رفتار اپ گریڈنگ کی مستحکم پیش رفت اور معیشت کی کوالٹی اور استدعداد کی بہتری کی وجہ سے ہوا ہے،مجموعی ملکی پیداوار کی شرح نمو 11سہ ماہیوں کیلئے 6.7فیصد سے 6.9فیصد کے درمیان رہی ہے،جبکہ بے روزگاری کی شرح اور افراط زر مستحکم رہا ہے۔

مزید : کامرس