ینگ ڈاکٹرز مطالبات کے حق میں سڑکوں پر نکل آئے

ینگ ڈاکٹرز مطالبات کے حق میں سڑکوں پر نکل آئے

لاہور(جنرل رپورٹر) ینگ ڈاکٹرز اپنے مطالبات کے حق میں ہڑتال کر کے سڑکوں پر نکل آئے، گزشتہ روز ینگ ڈاکٹرز کی تمام تنظیمیں سینکڑوں ڈاکٹروں کے ہمراہ جیل روڈ پر نکل آئیں بعدازاں ڈاکٹروں نے بے گناہ لیڈی ڈاکٹر سمیت 5ڈاکٹروں کے خلاف قتل کا مقدمہ خارج نہ کرنے کے خلاف تھانہ شادمان کا گھیراؤ کیا اور دھرنا دے کر سڑک بلاک کر دی جو کئی گھنٹے تک بند رہی اس موقع پر ڈاکٹروں نے پولیس کے رویئے کے خلاف نعرے بازی کی اور سڑک پر ہی پریس کانفرنس کی جس میں مطالبہ کیا گیا کہ سروسز ہسپتال کے لیڈی ڈاکٹر سمیت 5ڈاکٹروں کے خلاف 302قتل کا مقدمہ فی الفور واپس لیا جائے۔ ایڈہاک ڈاکٹروں کو مستقل کیا جائے سکیورٹی بل فی الفور منظور کیا جائے ورنہ پورے پنجاب کے ہسپتال بند کر دیں گے۔ مظاہرے اور دھرنے کی قیادت ینگ ڈاکٹرز ایسوسی ایشن پنجاب کے صدر ڈاکٹر معروف سینئر نائب صدر ڈاکٹر عاطف چوہدری ،نائب صدر ڈاکٹر انجم ،وائی ڈی اے جناح ہسپتال کے صدر ڈاکٹر حامد جنرل ہسپتال کے صدر ڈاکٹر سلیم، چلڈرن ہسپتال کے صدر ڈاکٹر عمر اور پی آئی سی کے چیئرمین ڈاکٹر حبیب نے کی۔ مظاہرے اور دھرنے سے قبل سروسز ہسپتال میں احتجاجی سیمینار ہوا جس میں لاہور بھر کے تمام ڈاکٹروں نے شرکت کی بعدازاں ڈاکٹرز جس میں پیرا میڈیکل سٹاف ایسوسی ایشن کے سینکڑوں ملازمین بھی شامل ہو گئے جو احتجاجی مارچ کرتے ہوئے جیل روڈ پر نکل آئے جہاں ڈاکٹروں نے سینہ کوبی کی اور نعرے بازی کی اس موقع پر وائی ڈی اے پنجاب کے صدر ڈاکٹر معروف اور سینئر نائب صدر ڈاکٹر عاطف چوہدری نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ بعض عناصر سروسز ہسپتال میں نوجوان کی موت کو سلم سجائی ایشو بنا کر فساد کرانا چاہتے ہیں جن ڈاکٹروں کے خلاف قتل کا مقدمہ درج کیا گیا ہے محکمہ صحت کی طرف سے بنائی گئی تحقیقاتی کمیٹیاں انہیں بے گناہ قرار دے چکی ہیں ایم ایس سروسز بھی گواہی دے چکے ہیں کے ڈاکٹر بے گناہ ہیں اس کے باوجودلیڈی ڈاکٹر سمیت 5ڈاکٹروں کے خلاف قتل کا مقدمہ درج کر لیا گیا سی سی پی او نے مقدمہ واپس لینے کی یقین دہانی کرائی جو ابھی تک واپس نہیں لیا گیا حالانکہ قواتین کے مطابق ہیلتھ کیئر کمیشن کی اجازت کے بغیر مقدمہ درج نہیں ہو سکتا ۔ ڈاکٹر عاطف نے کہا کہ صوبہ بھر کے تمام ایڈہاک ڈاکٹروں کو مستقل کیا جائے سکیورٹی بل منظور کر کے لاگو کیا جائے ورنہ تمام ہسپتالوں کے ڈاکٹر مجبوراً ہڑتال پر چلے جائیں گے اور سڑکوں پر آ کر دھرنے دیں گے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1