پنجاب لینڈ ریکارڈ اتھارٹی کے شعبہ رجسٹریشن آف ڈیڈ کے ملازمین کو 8ماہ بعد بھی تنخواہ نہ مل سکی

پنجاب لینڈ ریکارڈ اتھارٹی کے شعبہ رجسٹریشن آف ڈیڈ کے ملازمین کو 8ماہ بعد بھی ...

لاہور(اپنے نمائندے سے ) پنجاب لینڈ ریکارڈ اتھارٹی کے شعبہ(آر او ڈی) رجسٹریشن آف ڈیڈ کے ملازمین کو8ماہ گزر جانے کے بعد بھی تنخواہ نہیں مل سکی، صوبے بھر میں ملازمین کی کثیر تعداد تنخواہ کی بروقت ادائیگی نہ ہونے پر سراپا احتجاج بن گئی۔ آر اوڈی کے پراجیکٹ ڈائریکٹر نے دھمکی دی کہ میڈیا سے بات کرنے اور اس ایشو کوظاہر کرنے والے ملازمین کیخلاف سخت قانونی کارروائی ہوگی۔، انتظامیہ نے مجرمانہ خاموشی اختیارکرلی۔معلوم ہوا ہے کہ صوبا ئی دارالحکومت سمیت صوبے بھر میں پنجاب لینڈ ریکارڈ اتھارٹی کے شعبہ (آر او ڈی) رجسٹریشن آف ڈیڈ پراجیکٹ میں بھرتی ہونے والی خواتین اور مرد حضرات کو8ماہ کا عرصہ گزر جانے کے بعد بھی تنخواہ کی ادائیگی نہیں کی جاسکی ۔ ملازمین کی کثیر تعداد پراجیکٹ ڈائریکٹر فیض الحسن اور انتظامیہ کے خلاف سراپا احتجاج بن چکی ہے ،نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر ملازمین نے بتایا کہ ہمیں8ماہ سے تنخواہ کی ادائیگی نہیں کی جارہی۔الٹا دھمکیاں دی جارہی ہیں کہ اگر اس ایشو کو میڈیا پر لایا گیا پر اچھالا گیا تو آپ کے کنٹریکٹ منسوخ کردیں گے انتہائی مجبور اور لاچار ہیں اب تو جن لوگوں سے ادھا ر مانگ کر گزارا کررہے تھے۔ انہوں نے بھی ادھار دینا بند کرلیا ہے ہم اگر کسی بھی افسر سے اپیل کریں گے تو الٹا ہمارے خلاف شکایت کا حوالہ دیکر نوکریوں سے نکال دیاجائے گا ۔روزنامہ پاکستان کو پراجیکٹ ڈائریکٹر رجسٹریشن آف ڈیڈ فیض الحسن نے بتایاکہ تنخواہ ایک سے 2روزمیں مل جائے گی،8ماہ کی تاخیر کے ذمہ دار اے جی آفس اور محکمہ فنانس ہیں۔ ہمارے اکاؤنٹ آفیسر عباس روزانہ چکر لگارہے ہیں ا۔

مزید : صفحہ آخر