پنجاب بھر میں عطائیوں کیخلاف کریک ڈاؤن کا آغاز، 14اضلاع میں ٹیمیں روانہ

پنجاب بھر میں عطائیوں کیخلاف کریک ڈاؤن کا آغاز، 14اضلاع میں ٹیمیں روانہ

لاہور (جنرل رپورٹر)سپریم کورٹ کے احکامات کے مطابق عطائیوں کے مکمل خاتمے کے لیے پنجاب ہیلتھ کیئر کمیشن کی ٹیموں نے محکمہ صحت کی ٹیموں کے ساتھ مل کر عطائی ڈاکٹروں کے خلاف بڑے کریک ڈاون کا آغاز کر دیا ہے ۔اس سلسلے میں لاہور سمیت 14اضلاع میں کارروائی کے لیے ٹیمیں روانہ کر دی ہیں جنہوں نے گزشتہ روز سے عطائیوں کے اڈے بند کرنا شروع کر دیے ہیں۔ تفصیلات کے مطابق یہ ٹیمیں ضلعی انتظامیہ اور پولیس کے ساتھ مل کر مختلف اضلاع میں کارروائی کررہی ہیں تاکہ سپریم کورٹ میں مطلوبہ رپورٹ مقررہ وقت پر پیش کی جاسکے۔کمیشن نے اس سلسلے میں متعلقہ محکموں اور اسٹیک ہولڈرز کو بھی اعتماد میں لے لیاہے۔ مزید برآں کمیشن نے عطائیوں کے اڈوں کے بارے میں درست اطلاع حاصل کر نے کے لیے موبائل ایپ سنسس انفارمیشن مینجر(سی ایم آئی )کا آغازبھی کر دیاہے، جس سے متعلقہ حکام کوہمہ وقت درست معلومات فراہم ہواکریں گی۔گزشتہ ہفتہ میں کمیشن کی ٹیموں نے تین شہروں لاہور،راولپنڈی اور اوکاڑہ میں 100اتائیوں کے اڈوں کو بند کیا تھا ،جن میں اوکاڑہ کے 50،روالپنڈی کے 31اور لاہور کے 19کاروبار بند تھے۔ یادرہے کہ پنجاب ہیلتھ کیئرکمیشن نے اب تک 8,550سے زائد عطائیوں کے اڈوں کو بند کرکے انھیں تقریباً چھ کروڑ 65لاکھ روپے جرمانہ کر چکا ہے۔

مزید : صفحہ آخر