تحصیل کونسل ثمرباغ کے ضمنی انتخابات ایک مرتبہ پھر خفیہ معاہدہ کی نذر

تحصیل کونسل ثمرباغ کے ضمنی انتخابات ایک مرتبہ پھر خفیہ معاہدہ کی نذر

جندول (نمائندہ پاکستان) تحصیل کونسل ثمرباغ کے ضمنی انتخابات ایک مرتبہ پھر خفیہ معاہدہ کی نذر، غیر حتمی و غیر سرکاری نتائج کے مطابق مجموعی طور پر چودہ پولنگ سٹیشنوں میں 147ووٹ ڈالیں گے جن میں سے 81جماعت اسلامی کے امیدوار اخونزادہ عزیز الرحمن49تحریک انصاف کے ڈاکٹر سربلند خان اور 17ووٹ عوامی نیشنل پارٹی کے حاجی عقیل کو پڑے۔ تحصیل ثمرباغ کے مقامی پولنگ سٹیشن میں سب سے زیادہ 67ووٹ ڈالیں گئے جن میں سے 43تحریک انصاف ،18جماعت اسلامی اور6عوامی نیشنل پارٹی کو ملے اس کے علاوہ پانچ پولنگ سٹیشوں میں یکہ دکہ جبکہ باقی آٹھ پولنگ سٹیشنوں میں ایک بھی ووٹ نہیں ڈالا گیا اور انتخابات کا بائیکاٹ کیا گیا۔ اس کے علاوہ ضمنی انتخابات میں کوئی خاتون ووٹ ڈالنے نہ نکلی ۔ یاد رہے کہ تحصیل کونسل ثمرباغ کے نشست پر خواتین کی جانب سے ووٹ نہ ڈالیں جانے کی وجہ سے دو مرتبہ الیکشن کمیشن نے اس کونسل کا نتیجہ کلعدم قرار دیا تھا اور اج تیسری مرتبہ ضمنی انتخابات ہو رہے تھے مگر ایک مرتبہ پھر سیاسی جماعتوں اور عوام نے الیکشن کمیشن کا فیصلہ مسترد کر دیا ۔ تحصیل کونسل ثمرباغ کے علاوہ ویلیج کونسل سور غنڈئی کے ضمنی انتخابات میں بھی ایک مرتبہ پھر کوئی ووٹ نہیں ڈالا گیا۔

مزید : پشاورصفحہ آخر /رائے