پشاور بورڈ کے جونیئر کلرک کو مستقل نہ کرنے پر جواب طلب

پشاور بورڈ کے جونیئر کلرک کو مستقل نہ کرنے پر جواب طلب

پشاور(نیوزرپورٹر)پشاورہائی کورٹ کے جسٹس وقاراحمدسیٹھ اور جسٹس مسرت ہلالی پرمشتمل دورکنی بنچ نے عدالتی احکامات کے باوجود پشاوربورڈ کے جونیئرکلرک کو مستقل نہ کرنے پر چیف سیکرٹری ٗ چیئرمین پشاوربورڈ ٗ سیکرٹری ایجوکیشن اورسیکرٹری پشاوربورڈ کو توہین عدالت کانوٹس جاری کرکے جواب مانگ لیا عدالت عالیہ کے فاضل بنچ نے یہ احکامات گذشتہ روز آصف یوسفزئی ایڈوکیٹ کی وساطت سے دائردرخواست گذار سعید اللہ کی توہین عدالت کی درخواست پر جاری کئے اس موقع پر عدالت کو بتایاگیاکہ درخواست گذار پشاوربورڈ میں جونیئرکلرک تعینات ہے جس کی مستقلی کے لئے وزیراعلی کو سمری بھی بھجوائی گئی ہے اوراس حوالے سے پشاورہائی کورٹ درخواست گذار کی مستقلی کے احکامات بھی جاری کرچکی ہے اس کے باوجود درخواست گذار کومستقل نہیں کیاجارہا ہے جو توہین عدالت کے زمرے میں آتاہے لہذامتعلقہ حکام کے خلاف توہین عدالت کی کارروائی عمل میں لائی جائے عدالت عالیہ کے فاضل بنچ نے چیف سیکرٹری ٗ چیئرمین پشاوربورڈ ٗ سیکرٹری ایجوکیشن اورسیکرٹری پشاوربورڈ کو توہین عدالت کانوٹس جاری کرکے جواب مانگ لیا

مزید : پشاورصفحہ آخر /رائے