پولیس کی سمگلر کے ساتھ ملی بھگت، ماں کو بچوں کے سامنے برہنہ الٹا لٹکا کر تشدد، رقم کی ادائیگی کیلئے دباﺅ

پولیس کی سمگلر کے ساتھ ملی بھگت، ماں کو بچوں کے سامنے برہنہ الٹا لٹکا کر ...
پولیس کی سمگلر کے ساتھ ملی بھگت، ماں کو بچوں کے سامنے برہنہ الٹا لٹکا کر تشدد، رقم کی ادائیگی کیلئے دباﺅ

  

فیصل آباد (ویب ڈیسک) ماں کو بچوں کے سامنے برہنہ کرکے اُلٹا لٹکا کر پولیس کا تشدد، رقم کی ادائیگی کے لئے دباﺅ، بھتیجے عبدالمنان کو بھی ایک ہفتہ سے غیر قانونی حراست میں رکھ کر بدترین تشدد، مکان بیچ کر تایا کے پیسے ادا کرو، تفتیشی حبیب اللہ کی رٹ، ایس پی، ڈی ایس پی اور دیگر اعلیٰ افسران بھی ملوث۔

یوٹیوب چینل سبسکرائب کرنے کیلئے یہاں کلک کریں

روزنامہ خبریں کے مطابق شیخ اکرم نامی شخص کا باڑہ کے سمگلر ودان گل کے ساتھ کاروباری لین دین تھا جو کہ سمگل شدہ کپڑے کا کاروبار کرتے تھے جبکہ پس پردہ دیگر غیر قانونی مال کی سپلائی بھی کرتے تھے اور منی لانڈرنگ بھی ایک اہم کاروبار تھا جس میں ودان گل کے ساتھ کئی بااثر پولیس افسران بھی شراکت دارہیں۔ اسی سلسلے میں شیخ اکرم 2015ءمیں ہنڈی کی ایک بڑی رقم لے کر سعودی عرب گیا اور وہاں غائب ہوگیا۔ پیچھے ودان گل اس کے بیوی بچوں کو سنگین نتائج کی دھمکیاں دیتا رہا۔ ملزم کی بیوی لبنیٰ اور بچوں کو علاقہ غیر میں لے جاکر بیچنے کی دھمکیاں بھی دیں۔

اب تین سال بعد من پسند ایس پی کی تعیناتی کے بعد 20 لاکھ میں ہونے والی ڈیل کے نتیجہ میں ودان گل کا کام آسان ہوگیا جس نے تھانہ کوتوالی میں شیخ اکرم، اس کی بیوی، دو گونگے بچوں، ملازمین، خاندان کے دیگر افراد اور رشتہ داروں کے خلاف مقدمہ درج کروادیا۔ غیرت مند پولیس نے ملزم کے جرم کی پاداش میں اس کی بیوی، بچوں اور خاندان کے دیگر افراد کو ایک ہفتہ قبل اٹھایا جن کا اب کوئی پتہ نہیں۔

اخباری ذرائع کا کہنا ہے کہ ایس پی کی آشیر باد پر خاتون لبنیٰ، اس کے معصوم بچوں اور خاندان کے دیگر افراد کو ملازمین سمیت خفیہ ٹارچل سیل میں رکھا گیا ہے جہاں خاتون اور اس کے بھتیجے عبدالمنان پر تفتیشی حبیب اللہ کی طرف سے بدترین تشدد کیا جارہا ہے اور عبدالمنان پر دباﺅ ڈالا جارہا ہے کہ وہ اپنا مکان بیچ کر ودان گل کی رقم ادا کرے تاکہ ودان گل اور ہنڈی کے غیر قانونی کاروبار میں اس کے شراکت دار غیرت مند پولیس افسران کا نقصان پورا ہوسکے۔

سب سے افسوسناک بات یہ ہے کہ لبنیٰ بی بی کو اس کے معصوم بچوں کے سامنے برہنہ کرکے الٹا لٹکا کر تشدد کیا جارہا ہے اور اس تشدد کی نگرانی ڈی ایس پی عثمان وڑائچ ذاتی طور پر کررہا ہے۔

ودان گل کا ڈی ایس پی عثمان وڑائچ کی موجودگی میں یہ بھی کہنا ہے کہ اگر پولیس بھی حق نمک ادا کرنے میں ناکام رہی اور میری رقم بازیاب نہ ہوسکی تو میں پولیس کو چند لاکھ مزید دے کر لبنیٰ، اس کے بچوں اور رشتہ داروں کو اٹھا کر باڑے لے جاﺅں گا اور علاقہ غیر میں بیچ کر پیسے پورے کروں گا۔

مزید : علاقائی /پنجاب /فیصل آباد