خاتون کا 40 دن تک انسانوں سے رابطہ کاٹنے کافیصلہ، دور دراز علاقے میں جاکر اکیلی رہنے لگ گئی لیکن پھر بارہویں دن ہی کیا کام ہوگیا؟ جان کر کوئی شخص ایسا کرنے کا سوچے بھی نہ

خاتون کا 40 دن تک انسانوں سے رابطہ کاٹنے کافیصلہ، دور دراز علاقے میں جاکر ...
خاتون کا 40 دن تک انسانوں سے رابطہ کاٹنے کافیصلہ، دور دراز علاقے میں جاکر اکیلی رہنے لگ گئی لیکن پھر بارہویں دن ہی کیا کام ہوگیا؟ جان کر کوئی شخص ایسا کرنے کا سوچے بھی نہ

  

ایڈنبرا(مانیٹرنگ ڈیسک) سکاٹ لینڈمیںایک خاتون نے 40دن کے لیے انسانوں سے دو ر تنہاءرہنے کا فیصلہ کیا اور ایک دورافتادہ غیرآباد جزیرے پر چلی گئی لیکن 12ویں روز ہی ایسا کام ہو گیا کہ اسے انسانوں کو اپنی مدد کے لیے بلانا پڑگیا۔ میل آن لائن کے مطابق یہ خاتون حضرت عیسیٰ علیہ السلام کے صحرا میں گزارے گئے تنہائی کے ایام سے متاثر تھی چنانچہ اپنی ذات کی دریافت کے لیے انسانوں سے دور جانا چاہتی تھی۔ وہ اس مقصد کے لیے سکاٹ لینڈ کے جزیرے شیانت پر چلی گئی۔

رپورٹ کے مطابق ابھی اسے جزیرے پر گئے 12واں دن ہی تھا کہ وہ بلندی سے گر پڑی اور اس کے سر میں شدید چوٹیں آ گئیں۔ اس پر اس نے ایمرجنسی سروسز کو کال کرکے مدد کے لیے بلالیا۔ کوسٹ گارڈ کی ایک ٹیم اس کی مدد کو پہنچی اور اسے قریب ترین آباد جزیرے ویسٹرن آئیلس پر لے گئی اور وہاں کے ہسپتال میں داخل کروا دیا۔ رپورٹ کے مطابق اب اس خاتون کا ہسپتال میں علاج جاری ہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس