انٹرنیٹ پر بات، پھر آدمی کنواری لڑکی سے ملاقات کے لئے پہنچا تو وہاں کیا منظر تھا؟ اتنا عرصہ دراصل کس سے بات کرتا رہا؟ دیکھ کر پیروں تلے زمین نکل گئی کیونکہ۔۔۔

انٹرنیٹ پر بات، پھر آدمی کنواری لڑکی سے ملاقات کے لئے پہنچا تو وہاں کیا منظر ...
انٹرنیٹ پر بات، پھر آدمی کنواری لڑکی سے ملاقات کے لئے پہنچا تو وہاں کیا منظر تھا؟ اتنا عرصہ دراصل کس سے بات کرتا رہا؟ دیکھ کر پیروں تلے زمین نکل گئی کیونکہ۔۔۔

  

نیوکاسل(نیوز ڈیسک) اس دنیا میں جرائم پیشہ افراد کی اگرچہ کوئی کمی نہیں لیکن پھر بھی اس حد تک گرجانے والے کم ہی ہوتے ہیں جو اپنی بیٹی یا حتٰی کہ پوتی کی عمر کی لڑکی کو بھی ہوس کا نشانہ بنانے میں کوئی ہچکچاہٹ محسوس نہیں کرتے۔ برطانیہ میں ایک ایسا ہی شیطان صفت شخص عین اس وقت رنگے ہاتھوں پکڑا گیا جب وہ اپنی جنسی ہوس کی تسکین کے لئے ایک ’نوعمر لڑکی‘ سے ملنے پہنچا۔

نیوکاسل کرانیکل کے مطابق ایلن لیٹلی، جس کی عمر 55 سال ہے، ایک عرصے سے انٹرنیٹ کے ذریعے کمسن لڑکیوں کو اپنے جال میں پھنسانے کا شیطانی کام جاری رکھے ہوئے تھا۔ بچوں کے تحفظ کے لئے کام کرنے والے ادارے ڈارک جسٹس کو جب اس کی مشکوک سرگرمیوں کے بارے میں پتا چلا تو اسے رنگے ہاتھوں پکڑنے کے لئے ایک منصوبہ بنایا گیا۔ انٹرنیٹ پر وہ متعدد کم عمر لڑکیوں کے ساتھ رابطے میں تھا لیکن اسے معلوم نہیں تھا کہ ان میں سے ایک لڑکی دراصل کوئی لڑکی نہیں بلکہ ادارے ڈارک جسٹس کا ایک رکن تھا۔ ایلن نے اپنی گندی عادت کے مطابق اس کے ساتھ بھی مکروفریب کے ساتھ دوستی کا تعلق آگے بڑھایا اور بات ملاقات تک لے آیا۔ ملنے کے لئے جگہ اور وقت طے کرنے کے بعد وہ اپنے تئیں ایک کم عمر کنواری لڑکی سے ملاقات کے لئے پہنچا لیکن اس کے وہم وگمان میں بھی نہیں تھا کہ اب اس کا تماشہ بننے کا وقت آن پہنچا تھا۔ مقررہ جگہ پہنچتے ہی فلاحی ادارے کے کارکنوں نے اسے گھیر لیا اور موقعے پردبوچ کر پولیس کے حوالے کر دیا۔ عدالت میں اس بدقماش شخص کے خلاف مقدمہ چلایا گیا اور اور اب اسے ایک سال کے لئے جیل بھیجا جا چکا ہے۔ 

مزید : ڈیلی بائیٹس