چوک یتیم خانہ آپریشن، پنجاب پولیس کا حیران کن موقف آگیا

چوک یتیم خانہ آپریشن، پنجاب پولیس کا حیران کن موقف آگیا
چوک یتیم خانہ آپریشن، پنجاب پولیس کا حیران کن موقف آگیا
سورس:   Screen Grab

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) پنجاب پولیس کی جانب سے کہا گیا ہے کہ شرپسندوں کی جانب سے تھانہ نواں کوٹ پر قبضہ کرلیا گیا تھا جس کو چھڑانے کیلئے آپریشن کیا گیا تھا۔

ترجمان پنجاب پولیس کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ آج صبح سویرے بعض "شرپسندوں" نے تھانہ نواں کوٹ پر حملہ کیا جہاں رینجرز اور پولیس افسران تھانے کے اندر پھنس گئے تھے۔ ڈی ایس پی نواں کوٹ کو اغوا کرکے مرکز لے جایا گیا  اور"شرپسند" کم از کم 50 ہزار لٹر پٹرول پر مشتمل ایک آئل ٹینکر کو بھی مرکز لے گئے۔ انہوں نے مسلح  ہو کر رینجرز اور پولیس پر پٹرول بموں سے حملہ کیا۔

ترجمان کے مطابق پولیس اور رینجرز نے "شرپسندوں" کو پیچھے دھکیل دیا اور تھانے کا قبضہ واپس لے لیا۔ پولیس نے مسجد یا مدرسے کے خلاف کوئی منصوبہ بندی نہیں کی اور نہ ہی کوئی آپریشن کیا بلکہ اپنے دفاع اور عوامی املاک کے تحفظ کیلئے کارروائی کی تھی۔

خیال رہے کہ پولیس اور رینجرز کی جانب سے لاہور کے علاقے چوک یتیم خانہ میں کالعدم ٹی ایل پی کے مرکزی دھرنے کو ختم کرانے کیلئے کارروائی کی گئی ہے جس کے بارے میں دونوں جانب سے متضاد اطلاعات سامنے آ رہی ہیں۔

مزید :

علاقائی -پنجاب -لاہور -اہم خبریں -