سوئیڈن میں قرآن پاک کی بے حرمتی کیخلاف احتجاج کئی شہروں تک پھیل گیا

  سوئیڈن میں قرآن پاک کی بے حرمتی کیخلاف احتجاج کئی شہروں تک پھیل گیا

  

       سٹاک ہوم (این این آئی) سوئیڈن میں قران پاک کی بے حرمتی کے بعد مسلمانوں اور انتہا پسندوں کے درمیان ہنگامے پھوٹ پڑے۔غیر ملکی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق یورپی ملک سوئیڈن میں مسلمانوں اور انتہاپسندوں کے درمیان جھڑپوں میں کئی افراد زخمی ہوگئے۔ان جھڑپوں میں 12 پولیس اہلکار بھی زخمی ہوئے۔ہنگاموں کا آغاز اس وقت ہوا جب وسطی سوئیڈن کے علاقے اوریبرو میں انتہائی دائیں بازو کے گروپ کے قرآن پاک جلانے کے کیخلاف مسلمانوں نے مظاہرہ کیا۔اس موقع پر پولیس اور مظاہرین کے درمیان جھڑپیں بھی ہوئیں جس کے بعد پولیس کی چار گاڑیوں کو آگ لگا دی گئی جبکہ احتجاج کا سلسلہ تیسرے دن تک بھی جاری ہے۔اوریبرو میں افراتفری کے مناظر کی فوٹیج اور تصاویر میں پولیس کاروں کو جلاتے ہوئے اور مظاہرین کو ہنگامہ آرائی میں پولیس افسران پر پتھر اور دیگر اشیا ء پھینکتے ہوئے بھی دکھایا گیا۔پولیس ترجمان کا اپنے بیان میں کہنا تھا کہ پولیس پارٹی سٹریم کرس کے زیر اہتمام مظاہرے کی اجازت منسوخ نہیں کرے گی کیونکہ سوئیڈن میں ایسا کرنے کیلئے آزادی ہے۔پولیس کے بیان پر دوبارہ کشیدگی پھیل گئی اور 100 سے زائد  نوجوانوں نے پولیس پر پتھر پھینکنا شروع کردیے جبکہ کاروں، ٹائروں اور کوڑے دان کو بھی آگ لگا دی گئی۔پولیس ترجمان کا مزید کہنا تھا کہ احتجاج کا سلسلہ کئی شہروں تک پھیل گیا ہے۔

سوئیڈن احتجاج

مزید :

صفحہ اول -