وکلاء مسائل ترجیحی بنیادوں پر حل کر ینگے،جسٹس امیر بھٹی

وکلاء مسائل ترجیحی بنیادوں پر حل کر ینگے،جسٹس امیر بھٹی

  

ملتان،ڈیرہ غازیخان(وقائع نگار،نامہ نگار) چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ امیر محمد بھٹی نے صدر ڈسٹرکٹ بار ایسوسی ایشن ڈیرہ غازیخان سردار محمد عارف خان گورمانی کی درخواست پر کوٹ چھٹہ جوڈیشل کمپلیکس کی تعمیر کیلئے پرائیویٹ لینڈ ایکوائر کرنے کی اجازت دیدی ہے صدر بار سردار محمد عارف خان گورمانی نے جنرل سیکرٹری شیخ محمد شفیع الرحمن، سابق جنرل (بقیہ نمبر24صفحہ6پر)

سیکرٹری جہانگیر خان وڈانی، سابق جوائنٹ سیکرٹری مجاہد اکبر رضوی، دیگر وکلا رانا قدرت شیر، رانا غلام حیدر، عامر خان احمدانی، فرحت خان احمدانی،غضنفر خان جلبانی، تحصیلدار مہر شمعون اور حلقہ پٹواری اعجاز احمد کے ہمراہ کوٹ چھٹہ چوٹی روڈ پر مجوزہ اراضی کا معائنہ کیا اس موقع پر صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے سردار محمد عارف خان گورمانی نے کہا کہ چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ امیر محمد بھٹی نے کوٹ چھٹہ میں جوڈیشل کمپلیکس کی تعمیر کیلئے چوٹی روڈ پر 201 کنال پرائیویٹ لینڈ ایکوائر کرنے کی اجازت دیدی ہے کوٹ چھٹہ جوڈیشل کمپلیکس کے قیام سے تحصیل کوٹ چھٹہ کے لاکھوں افراد کو ان کی دہلیز پر انصاف کی فراہمی ممکن ہو سکے گی جس کیلئے وہ اپنا بھرپور کردار جاری رکھے ہوئے ہیں۔انہوں نے مزید کہا کہ گورنمنٹ لینڈ کی عدم دستیابی کے باعث کوٹ چھٹہ تحصیل کچہری کا قیام کئی سال سے التوا کا شکار تھا تاہم میری درخواست پر چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ امیر محمد بھٹی نے سیشن جج ڈیرہ غازیخان عبدالرحیم خان کو فوری طور پر پرائیویٹ لینڈ ایکوائر کرنے کی ہدایات جاری کردی ہیں یہ مرحلہ مکمل ہوتے ہی سال رواں میں جوڈیشل کمپلیکس کی تعمیر شروع کر دی جائے گی۔دریں اثناء ملتان سے ڈسٹرکٹ بار عہدیداروں نے چیف جسٹس سے لاہور میں ملاقات کی اور مختلف مسائل پر تبادلہ خیال کیا جس پر چیف جسٹس امیر بھٹی نے وکلاء مسائل حل کرنے کی یقین دہانی کرائی اور کہا کہ جلد ہی اس سلسے میں پیش رفت سامنے آئے گی۔ملاقات کرنے والوں میں وسیم بابر، ارشد  میؤ شامل تھے۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -