چہرے تبدیل کرنے سے ملک میں بہتری نہیں آئے گی،ذیشان اختر

   چہرے تبدیل کرنے سے ملک میں بہتری نہیں آئے گی،ذیشان اختر

  

بہاولپور(بیورورپورٹ،ڈسٹرکٹ رپورٹر) نائب امیر جماعت اسلامی جنوبی پنجاب سید ذیشان اختر نے کہا ہے کہ رمضان صبر و ہمت اور رحمتوں کا مہینہ ہے۔ اس مبارک ماہ میں حق و باطل کی جنگ ہوئی جس میں اللہ نے حق کو فتح عطا فرمائی اور اسلام دشمن رسوا ہوئے۔قرآن(بقیہ نمبر17صفحہ6پر)

 و سنت کا نظام پوری دنیا کیلئے  رحمت اور انصاف کا نظام ہے۔ طاغوتی اور سرمایہ دارانہ نظام نے دنیا کو غلامی اور بھوک ننگ کے سوا کچھ نہیں دیا۔ سودی کاروبار سے ملک میں رحمت نہیں بلکہ امریکا اور آئی ایم ایف کی شکل میں مصیبتیں نازل ہوتی ہیں۔ لوگ دو وقت کی روٹی کو ترس گئے۔ چہروں کے بدلنے سے ملک میں تبدیلی نہیں آئے گی، اس ظالمانہ نظام کو بدلنے کی اشد ضرورت ہے۔ جماعت اسلامی ملک میں اسلامی نظام کیلئے جدوجہد کر رہی ہے۔ اسلامی نظام ہی ملک میں خوشحالی لا سکتا ہے۔ان خیالات کا اظہار انھوں نے نواحی علاقہ ڈیرہ عزت میں جامع مسجد نورالسلام میں مستحقین و غریب افراد میں عید پیکیج تقسیم کرنے کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔انہوں نے کہا کہ آئی ایم ایف کی غلامی میں مظلوم مزید چکی میں پستا جا رہا ہے جب کہ سرمایہ داروں کے بنک بیلنس تیزی سے بڑھ رہے ہیں۔ عوام انصاف کے حصو ل کیلئے دربدر کی ٹھوکریں کھا رہے ہیں۔ انھوں نے کہا کہ ملک میں بے یقینی کو ختم کرنے کیلئے ضروری ہے کہ شفاف الیکشن کا اعلان کیاجائے۔ پانی میں مدھانی سے کچھ حاصل نہیں ہوتا بلکہ برتن ٹوٹنے کا خطرہ بڑھ جاتا ہے۔ انھوں نے کہا کہ دنیا نے اقوام متحدہ کے دہرے معیار کو دیکھ لیا، کشمیر و فلسطین کے مظلوم لوگ کے خلاف ظلم کی داستان لکھی جا رہی ہیں ان کو قتل کیا جا رہا ہے اور ان کی املاک کو نذرآتش کر دیاجاتا ہے۔ مقبوضہ خطے میں خواتین کی بے حرمتی کی جا ری ہے۔ اس کے باوجود اقوام متحدہ ٹس سے مس نہیں ہو رہی۔تقریب میں امیر پی پی 246 خالد بل جلیل اور سراج احمد نے بھی خطاب کیا۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -