پرائس کنٹرول مجسٹریٹ نے تاجروں کو نشانے پر لے لیا، جرمانوں سے حملہ 

پرائس کنٹرول مجسٹریٹ نے تاجروں کو نشانے پر لے لیا، جرمانوں سے حملہ 

  

         وہاڑی(بیورو رپورٹ)پرائس کنٹرول مجسٹریٹ/ڈپٹی ڈائریکٹر لائیو سٹاک کی بدحواسیاں سامنے آگئیں عام مارکیٹ میں 10کلوگرام آٹے کی تھیلی کا سرکاری ریٹ تبدیل ہونے کے باوجود دوکانداروں کو ناجائز جرمانے کئے جس پر تاجروں نے  احتجاج کیا تفصیل کے مطابق 7 اپریل سے محکمہ خوراک نے سرکاری کوٹہ ختم کر دیا تھا  جس کے باعث عام مارکیٹ میں آٹے کی 10کلوگرام تھیلی جس کا سرکاری ریٹ(بقیہ نمبر12صفحہ6پر)

 550 روپے تھا اب پرائیویٹ گندم کے حساب سے 660 روپے عام مارکیٹ میں ہو گیاہے لیکن 10 دن گزرنے کے باوجود پرائس کنٹرول مجسٹریٹ/ڈپٹی ڈائریکٹر لائیو سٹاک ڈاکٹر مسعود بابر نے دوکانداروں کو آٹے کی تھیلی 550 روپے فروخت نہ کرنے پر ہزاروں روپے جرمانے کررہا ہے اس حوالہ سے جب دوکانداروں نے مجسٹریٹ کو بتانے کی کوشش کی تو وہ مبینہ طور پر آپے سے باہر ہوگیا تاجر،اکرم ماہتاب، مختار، تنویر، ارشد و دیگر نے شدید ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ یہ کیسا بدحواس افسر ہے جو سرکاری کوٹہ ختم ہونے کے باوجود کسی کو دو ہزار اور کسی کو پانچ ہزار  جرمانہ کر رہا ہے غریب دوکانداروں نے بلاجواز جرمانوں پر ڈپٹی کمشنر وہاڑی سے مطالبہ کیا ہے کہ ایسے افسران کو پرائس کنٹرول مجسٹریٹ نہ تعینات کیا جائے جن کو اصل ریٹس اور سرکاری پالیسی کا علم ہی نہیں اور اس کے خلاف کاروائی کرتے ہوئے غریب دوکانداروں کے نقصان کا ازالہ کیا جائے۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -