دہشت گرد افغان سرزمین سے پاکستان میں کارروائیاں کر رہے ہیں:دفتر خارجہ

  دہشت گرد افغان سرزمین سے پاکستان میں کارروائیاں کر رہے ہیں:دفتر خارجہ

  

        اسلام آ باد (سٹاف رپورٹر) ترجمان دفترخارجہ عاصم افتخار احمد نے کہا ہے کہ دہشت گرد مکمل آزادی سے افغان سرزمین کا استعمال کرتے ہوئے پاکستان میں کارروائیاں کررہے ہیں۔ اپنے جاری کردہ بیان میں ترجمان دفترخارجہ عاصم افتخار احمد نے کہا کہ گزشتہ چند روز میں پاک افغان سرحد پر پیش آنے والے واقعات میں اضافہ ہوا ہے۔ ترجمان دفترخارجہ نے کہا کہ ان واقعات میں پاکستانی سیکیورٹی فورسز کو سرحد پار سے نشانہ بنایا جا رہا ہے، پاکستان نے گزشتہ چند ماہ میں بارہا افغان حکومت سے پاک افغان سرحدی علاقوں کو محفوظ بنانے کی درخواست کی ہے۔  عاصم افتخار احمد نے کہا کہ دہشت گرد مکمل استثنی سے افغان سرزمین کا استعمال کرتے ہوئے پاکستان میں کارروائیاں کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان اور افغانستان گزشتہ کئی ماہ سے ادارہ جاتی چیلنجز سے مشترکہ سرحد پر موثر رابطوں و سیکیورٹی کے لیے رابطہ میں ہیں، بدقسمتی سے سرحدی علاقوں میں کالعدم تحریک طالبان پاکستان سرحدی چوکیوں پر حملے کر رہی ہے۔ عاصم افتخار احمد کا کہنا تھا کہ ان حملوں کے نتیجہ میں کئی پاکستانی فوجی شہید ہو چکے ہیں،  رواں برس 14 اپریل کو افغانستان سے آپریٹ ہونے والے دہشت گردوں کے ہاتھوں شمالی وزیرستان میں پاک فوج کے 7 سپاہی شہید ہوئے تھے۔ ترجمان دفترخارجہ نے کہا کہ پاکستان ایک مرتبہ دہشت گردوں کی استثنی کے ساتھ افغان سرزمین کو استعمال کرتے ہوئے پاکستان میں کارروائیوں سخت الفاظ میں مذمت کرتا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ یہ عمل ہماری پاک افغان سرحد کے ساتھ ساتھ امن و استحکام برقرار رکھنے کی کوششوں کے لیے نقصان دہ ہے، پاکستان افغانستان کی غیر جانبدار حکومت کو پاک افغان سرحد کو محفوظ بنانے کی درخواست کرتا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ پاکستان اس موقع پر افغانستان کی آزادی سلامتی اور علاقائی سالمیت کے عزم کی تجدید کرتا ہے، پاکستان تمام شعبوں میں باہمی تعلقات کے استحکام کے لیے افغان حکومت سے قریبی تعاون کو تیار ہے۔

ترجمان

مزید :

صفحہ آخر -