عمران خان نے گھڑی،زیور نہیں پاکستان کی عزت بیچی،تحفہ دینے والے کیا سوچتے وہنگے:احسن اقبال

  عمران خان نے گھڑی،زیور نہیں پاکستان کی عزت بیچی،تحفہ دینے والے کیا سوچتے ...

  

       نارووال،اسلام آباد(نمائندہ خصوصی، نیوز ایجنسیاں) مسلم لیگ (ن) کے سیکریٹری جنرل احسن اقبال نے کہا ہے کہ عمران خان نے توشہ خانے سے 2 کروڑ میں گھڑی خرید کر 18 کروڑ کمائے، عمران خان نے ایک گھڑی نہیں بیچی، زیور نہیں بیچا، پاکستان کی عزت بیچی ہے۔ رہنما مسلم لیگ ن نے کہا کہ عمران خان پہلے وزیراعظم ہیں جنہوں نے پاکستان کو ملنے والے تحفے بازار میں بیچ کر پیسے کمائے، تحفے دینے والے کیا سوچتے ہوں گے کہ کیا پاکستان کا وزیراعظم ایسی گری ہوئی حرکت کرسکتا ہے۔نارووال میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان میں پہلی بار آئینی جمہوری طریقہ کار کے مطابق کسی وزیر اعظم کو برطرف کیا گیا ہے، عمران نیازی پاکستان کے وہ بدقسمت وزیر اعظم ہیں جنہیں پاکستان کی قومی اسمبلی نے ان کے عہدہ سے برطرف کیا۔انہوں نے کہا کہ عمران نیازی کا پونے چار سال کا اقتدار پاکستان کے سیاہ ترین ادوار میں یاد رکھا جائے گا، آپ کی ساری سیاست سودا گری کے اوپر ہے، آپ نے پارٹی، سینٹ کی ٹکٹیں بیچی، جاتے جاتے کشمیر میں اپنے کارکن کو وزیر اعظم بنایا تھا اسے ذبح کر کے کشمیر کی وزارت عظمی بھی بیچ گئے۔ان کا کہنا تھا کہ بتائے کتنے میں سودا کیا ہے اسلام آباد میں ہر شخص یہی بات کر رہا ہے؟ آپ نے کشمیر کے عوام کو جاتے جاتے نہیں بخشا ان کا بھی سودا کر کے چلے گئے ہیں، جو شخص ہر چیز میں سودا کرے وہ پاکستان کا ہیرو نہیں ولن ہو سکتا ہے۔احسن اقبال نے کہا کہ پرائم منسٹر پرائم بیگر بن گیا، وہ شخص جو پرائم بیگر تھا جو ہر ملک میں کشکول لے کر گھومتا تھا وہ جنگ آزادی کا ہیرو نہیں ہے وہ پاکستان کا میر جعفر میر صادق ہے۔انہوں نے کہا کہ آپ نے کل جلسے میں کہا ہے دل پر چوٹ لگی ہے کہ رات کو عدالتیں کیوں کھلی ہیں، عمران نیازی صاحب 22 کروڑ عوام کے دل پر بھی چوٹ لگی ہے کہ آپ نے سولین مارشل لا نافذ کرنے کی کوشش کی ہے۔ان کا کہنا تھا کہ 22 کروڑ عوام بھی کبھی اپنے آئین پے جو آپ نے وار کیا تھا عوام نہیں بھلا سکیں گے، آپ آئین شکن وزیر اعظم کے طور پر لکھے جائے گے، آپ نے اپنی ڈوبتی حکومت کو بچانے کے لئے پاکستان کے آئین کو توڑا تھا۔ مسلم لیگ ن کے رہنما احسن اقبال نے مزید کہا کہ آپ 10 منٹ سے بچ گئے اگر سپریم کورٹ کے فیصلے کی حکم ازولی کرتے، تو آپ کو پتا کہ آئین شکنی کا کیا انجام ہوتا ہے۔دوسری جانب پی ٹی آئی رہنما عمر ایوب نے احسن اقبال کو سخت جواب دیا ہے۔ٹوئٹر پر عمران خان کے کراچی جلسے میں شرکت کے لیے پبلک کمپنی کے چارٹر طیارہ  استعمال کرنے  پر مسلم لیگ ن کے رہنما احسن اقبال نے سخت ردعمل کا اظہار کیا تھا۔ احسن اقبال نے ایک تصویر سوشل میڈیا پر شیئر کی تھی جس میں عمران خان اور شاہ محمود قریشی کے پیچھے ایک طیارہ بھی نظر آ رہا ہے۔مسلم لیگ ن کے رہنما  نے اپنی ٹوئٹ میں لکھا تھا کہ اینگرو کارپوریشن کی جانب سے انتہائی غیر پیشہ ورانہ رویہ دیکھنے میں آیا کہ ایک سیاسی جماعت کا لیڈر حکومت مخالف ریلی کے لیے ان کا طیارہ استعمال کر رہا ہے، اس سے ہٹ کر کہ یہ طیارہ چارٹر تھا یا اسپانسرڈ، برائے مہربانی ایک عوامی کمپنی ہونے کی حیثیت سے اپنی حدود کو جانیں، یہ ذاتی جاگیر نہیں ہے۔ احسن اقبال  کی ٹوئٹ کا جواب دیتے ہوئے عمر ایوب نے ٹوئٹ کی کہ  یہ فیصلہ ایک کمپنی کو کر ناہے کہ وہ آمدنی کے لیے اپنے اثاثے(ہوائی جہاز)کرائے پر دینے کا فیصلہ کرے آپ کو نہیں۔کارپوریشن سیکٹر کو دھمکیاں دینا، تھانے دار ذہنیت کی عکاس ہے، اس امپورٹڈ حکومت میں خوف وہراس پھیلا ہوا ہے۔ویسے آپ کے پیپلز پارٹی کے اتحادی آپ کے ساتھ شامل ہونے کو کیوں تیار نہیں ہیں؟ وہ کیا آپ کو دھوکا دے رہی ہے؟

احسن اقبال

مزید :

صفحہ آخر -