چوہدری عبد الرحمن کا وزیراعظم شہباز شریف کو خط

چوہدری عبد الرحمن کا وزیراعظم شہباز شریف کو خط
چوہدری عبد الرحمن کا وزیراعظم شہباز شریف کو خط

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)پروفیسر ڈاکٹر چوہدری عبدالرحمن نے وزیراعظم شہباز شریف کو خط لکھ کر مطالبہ کیا ہےکہ چیئرمین ایچ ای سی کی  تقرری شفاف اور میرٹ کی بنیاد پر کی جائے۔

چوہدری عبد الرحمان نے وزیراعظم کو خط لکھا ہے جس میں ان کا کہنا تھا کہ ایسوسی ایشن آف پرائیویٹ سیکٹر یونیورسٹیز آف پاکستان کی جانب سے آپ کو پاکستان کے 23 واں وزیر اعظم منتخب ہونے پر مبارکباد پیش کرتا ہوں،پاکستان کے اعلیٰ تعلیم کے شعبے میں پرائیویٹ سیکٹر بہت اہم کردار ادا کر رہا ہے۔انہوں نے کہا کہ ایسوسی ایشن آف پرائیویٹ سیکٹر یونیورسٹیز آف پاکستان (اے پی ایس یو پی) ایک منتخب نمائندہ ادارہ ہے،ایچ ای سی میں نجی شعبے کی 92 یونیوسرٹیز 34 علاقائی کیمپسز کیساتھ 40 فیصد طلباء کیساتھ درج ہیں،ہائر ایجوکیشن کمیشن سپریم ادارہ ہے جو 2002 میں تشکیل دیا گیا ہے،ایچ ای سی کو بنیادی طور پر فنڈنگ،نگرانی،ریگولیٹ اور اعلی معیار تعلیم کو تسلیم کرنے کے لیے قائم کیا گیا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ پاکستان میں اعلیٰ تعلیم کو آج کل کئی سنگین مسائل کا سامنا ہے،ان مسائل کے باعث تعلیمی شعبے کونقصان پہنچا ہے،ایچ ای سی انتظامیہ کی یکطرفہ بند دروازے کی پالیسیوں کو 180 میں سے 178 وائس چانسلرز نے مسترد کیا،ایچ ای سی کی امتیازی پالیسیوں کے باعث پرائیویٹ سیکٹر کو بھی کافی نقصان پہنچا۔چوہدری عبد الرحمن نے کہا کہ موجودہ چیئرمین ایچ ای سی کی چار سالہ مدت آئندہ آخری ہفتے میں ختم ہو رہی ہے،یہ اعلیٰ تعلیم کو بچانے کا ایک صحیح وقت ہے،چیئرمین ایچ ای سی کی تقرری پر میرٹ اور شفاف طریقہ کار کا اطلاق کیا جائے۔ان کا کہنا تھا کہ تقرری کا عمل صرف اس صورت میں ممکن ہے جب تقرری سیاسی اور بیرونی عمل و دخل سے پاک ہو،پاکستان میں اعلیٰ تعلیم کے لیے متحرک مواقع پیدا کرنے کی اشد ضرورت ہے،بطور وزیراعظم اور کنٹرولنگ اتھارٹی ہونے پر آپ سے ایک کمیٹی کی درخواست ہے۔ انہوں نے کہا کہ بین الاقوامی ماہرین تعلیم پر مشتمل غیرجانبدار اور اہل سرچ کمیٹی قائم کی جائے ،میرٹ کی بنیاد پر شفاف تقرری کے لیے ایک سرچ کمیٹی کا کردار بہت ضروری ہے،موجودہ وزیراعظم بطور کنٹرولنگ اتھارٹی نئے چیئر مین ایچ ای سی کی تعیناتی کے عمل کو ہر قسم کے سیاسی اثرو رسوخ سے پاک رکھیں گے۔ چوہدری عبدالرحمن نے کہا کہ اس اہم عہدے کے لئے چربہ سازی اور دیگر مقدمات میں ملوث اشخاص کو اس تمام تر پراسیس سے دور رکھا جائے،چیئرمین ایچ ای سی کی مدت ملازمت میں توسیع سے بھی گریز کیا جائے۔انہوں نے مزید کہا کہ اپنے تحفظات آپ کے سامنے پیش ہیں،تعاون کی امید ہے،بطور اسٹیک ہولڈر اعلیٰ تعلیمی معیار،ملک کی سماجی و اقتصادی ترقی میں کردار کےلیئے بھرپور تعاون کا یقین دلاتا ہوں،اے پی ایس یو پی کی ایگزیکٹو کمیٹی کے اراکین سے ملاقات کے لیے مناسب وقت دیا جائے۔

مزید :

علاقائی -اسلام آباد -پنجاب -لاہور -