ڈینگی کی تشخیص کا طریقہ ‘تبدیل مہنگے ترین ٹیسٹ کرانیکا فیصلہ

ڈینگی کی تشخیص کا طریقہ ‘تبدیل مہنگے ترین ٹیسٹ کرانیکا فیصلہ

  

لاہور(جاوید اقبال) حکومت نے صوبائی درالحکومت کو ڈینگی بخار سے پاک علاقہ ظاہر کرنے کیلئے ڈینگی کی تشخیص کا طریقہ کار تبدیل کر دیا ہے۔ ڈینگی کی تصدیق کمپلیٹ بلڈ اکاﺅنٹ یعنی (سی بی سی) نامی ٹیسٹ سے کی جاتی تھی۔ محکمہ صحت نے کور کمیٹی کی سفارشات پر سی بی سی نامی ٹیسٹ کو ڈینگی کی تشخیص کیلئے غیر اہم قرار دیتے ہوئے اس کی تشخیص اور تصدیق کیلئے مہنگے ترین وہ ٹیسٹ جن میں آئی جی جی ‘ آئی جی ایم ‘ این ایس آئی اور پی سی آر کرانا لازمی قرار دیدیا ہے۔ ذرائع نے بتایا کہ محکمہ صحت نے تمام ہسپتالوں کے میڈیکل سپرنٹنڈنٹس کو حکم دیا ہے کہ یہ تمام پروفیسروں اور ڈاکٹروں کو پابند کیا جائے۔ سی بی سی میں ڈینگی وائرس کا ٹیسٹ پازٹیو آنے پر کسی مریض کو ڈینگی ڈیکلیئر کرنے سے قبل مزید 9 ٹیسٹ کروانےکی شرط قرار دی گئی ہے جس میں آئی جی پی ‘ آئی جی ایم ایف‘ ایس آئی اور پی سی آر نامی ٹیسٹ کروائے جائیں۔ پہلے تین ٹیسٹوں کی مریض میں ڈینگی کی تصدیق ہوجانے کی صورت میں کسی مریض کو ڈینگی کا مریض قرار نہیں دیا جاسکے گا۔ اس کیلئے مہنگا ترین پی سی آر نامی ٹیسٹ کروانا ہوگا۔ جہاں قابل ذکر بات یہ ہے کہ پی سی آر نامی ٹیسٹ کی سہولت لاہور سمیت پورے صوبہ کے صرف ایک جناح ہسپتال میں موجود ہے مگر وہاں بھی کئی ما ہ سے ٹیسٹ کٹس موجود نہیں ہیں اسی طرح پہلے تین ٹیسٹ جن پر ISG-IS-m-n-si شامل ہیں بھی عام آدمی کی پہنچ میں نہیں آئے اور ان کی بھی کٹس سرکاری ہسپتال میں موجود نہیں۔ ماہرین کا کہنا ہے کسی مریض میں ڈینگی وائرس کی موجودگی کاعام ٹیسٹ سی بی سی تھا جس سے صرف 90 روپے میں کسی مریض میں ڈینگی ہونے یا نہ ہونے کی تصدیق ہوجاتی تھی مگر اس مرتبہ حکومت چاہتی ہے کہ ڈینگی بخار کو کم کیاجاسکے۔ جس کا حکومت کے قریب والا طریقہ یہ ہے کہ اس کی تصدیق کیلئے طریقہ کار پیچیدہ ترین کر دیا جائے سو کر دیا گیا ہے۔ ان ٹیسٹوں کی رپورٹ آنے میں جناح ہسپتال میں دو سے 3 ماہ لگتے ہیں جبکہ پی سی آر کی پرائیویٹ سیکٹر میں 15 ہزار کا ٹیسٹ ہے اور ایک ہفتہ لگتا ہے۔ ہر شخص یہ ٹیسٹ نہیں کرا سکتا جبکہ دیگر تین ٹیسٹوں کی فیس بھی ہزاروں میں ہے۔ سرکاری ہسپتال میں چند ایک مریضوں کو تو یہ سہولت دی جاسکتی ہے مگر زیادہ مریض آنے کی صورت میں یہ طریق کار ناکام ہوجائے گا۔ اس وقت تک صرف شہر لاہور کے مختلف ہسپتالوں میں 6 سو کے قریب ڈینگی وائرس میں مبتلا مریض آچکے ہیں جن کا ریکارڈ 18 جون سے 15 اگست تک میو ہسپتال میں موجود ہے مگر ان میں سے 5 سو 89 مریضوں کو ڈینگی کے مشتبہ مریض قرار دے کر گھروں کو بھیج دیا گیا اور ان کے ٹیسٹ بی سی آر بھی کراوائے گئے صرف 11 مریضوں کو ڈینگی کے تصدیق شدہ مریض قرار دیا گیا مگر یہ عوام کی آنکھوں میں دھول جھونکنے اور لاہورکو ڈینگی سے تقریباً پاک علاقہ قرار دلانے کیلئے کہا جارہا ہے۔ دوسری طرف ضلعی حکومت اور محکمہ صحت نے جو سپرے کا شیڈول دیا تھا اس شیڈول کے مطابق نہیں کیا گیا۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -