پنجاب میں بیویوں کے ہاتھوں شوہروں کے قتل میں تشویشناک حد تک اضافہ، مردوں کیلئے پریشان کن خبر آگئی

پنجاب میں بیویوں کے ہاتھوں شوہروں کے قتل میں تشویشناک حد تک اضافہ، مردوں ...
پنجاب میں بیویوں کے ہاتھوں شوہروں کے قتل میں تشویشناک حد تک اضافہ، مردوں کیلئے پریشان کن خبر آگئی

  


لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن) آبادی کے لحاظ سے پاکستان کے سب سے بڑے صوبے پنجاب میں بیویوں کے ہاتھوں شوہروں کے قتل کے واقعات میں تشویشناک حد تک اضافہ ہوگیاہے ، 8افراد بیویوں کے ہاتھوں یا ان کی منشاءپر قتل ہوچکے ہیں۔

ایکسپریس نیوز کی ایک رپورٹ کے مطابق ایک سال میں گھریلو ناچاقیوں، میاں بیوی میں ازدواجی زندگی میں پائی جانیوالی غلط فہمیوں کے باعث پنجاب میں 8 افراد اپنی ہی بیویوں کے ہاتھوں براہ راست یا ان کی ایما پر قتل ہوچکے ہیں۔ پولیس کے مطابق بیویوں کے ہاتھوں شوہروں کے قتل کی وارداتوں میں اضافہ ہونے لگا ہے، گزشتہ ایک سال کے دوران متعدد وارداتوں میں شوہروں کے قتل میں بیویاں ہی ملوث پائی گئیں۔ایس ایس پی آپریشنز اسماعیل کھاڑک کا کہنا ہے کہ قتل کی ایسی واردات میں پولیس کی ابتدائی تفتیش میں بہت سے مختلف پہلو سامنے آتے ہیں جن میں شوہر کا ظالم ہونا، خاتون کی پسند کے خلاف شادی، غربت اور شوہر کا کسی دوسری عورت میں دلچسپی سمیت نشئی ہونا شامل ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ ہمارے ٹی وی چینلز پر چلنے والے کئی ایسے ڈرامے اور فلمیں ہیں جو کہ غیرملکی میڈیا کو کاپی کرتے ہیں اور معاشرے میں افراتفری پھیلانے کا باعث بن رہے ہیں۔

بیویوں کے ہاتھوں شوہروں کے قتل کے واقعات میں اضافے پر مذہبی اسکالر مولانا ڈاکٹر راغب نعیمی نے بتایا کہ اس طرح کے واقعات میں اضافے کی ایک بڑی وجہ مذہب اسلام سے دوری ہے، دین اسلام میں واضح ہے کہ والدین نکاح کے وقت اپنی اولاد کی مرضی معلوم کریں اورپھر اس کے مطابق نکاح کریں۔

مزید : جرم و انصاف


loading...