محرم میں فول پروف سیکیورٹی کیلئے تمام وسائل بروئے کارلائے جائینگے: آئی جی 

محرم میں فول پروف سیکیورٹی کیلئے تمام وسائل بروئے کارلائے جائینگے: آئی جی 

  

لاہور(کرائم رپورٹر)انسپکٹر جنرل پولیس پنجاب شعیب دستگیر نے کہا ہے کہ دوران محرم الحرام صوبے میں امن و امان کی فضا برقرار رکھنے اور مجالس، جلوسوں اور امام بارگاہوں کے تحفظ کیلئے منتظمین کی تجاویز کو مد نظر رکھتے ہوئے پولیس فورس جدید ترین ٹیکنالوجی سمیت تمام دستیاب وسائل کوبروئے کار لائے گی انہوں نے مزیدکہاکہ عزاداروں کا تحفظ ہماری اولین ترجیحات میں شامل ہے جسے سیکیورٹی ڈیوٹی پر تعینات افسران و جوان اپنی جانوں کی پرواہ کئے بغیر پوری ایمانداری اورفرض شناسی کے ساتھ یقینی بنائیں گے دوران محرم36464 مجالس اور 9127جلوسوں کی سکیورٹی کے فراہمی کے لیے آر پی اوز،ڈی پی اوز کی زیر نگرانی پولیس فورس شب وروز متحرک رہے گی اور سینئر افسران خود فیلڈ میں رہ کر سیکیورٹی انتظامات کی مانیٹرنگ کریں گے انہوں نے ڈی آئی جی آپریشنز پنجاب سہیل سکھیرا کو دوران محرم صوبہ میں شیعہ کمیونٹی کے ساتھ کوارڈی نیشن کیلئے فوکل پرسن نامزد کرتے ہوئے ہدایت کی کہ وہ صوبے کے تمام اضلاع کے اہل تشیع عمائدین کے ساتھ 24/7رابطہ رکھیں اورکسی مسئلے یا ایمرجنسی کی صورت میں بلا تاخیر بروقت اقدامات کو یقینی بنائیں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے سنٹرل پولیس آفس میں شیعہ علماء کے وفد سے ملاقات کے دوران گفتگو کرتے ہوئے کیا وفد میں صوبائی سربراہ مجلس وحدت المسلمین علامہ عبدالخالق اسدی،علامہ سید حسن رضا ہمدانی، چیئرمین عزاداری سیل سید خرم نقوی، سابق چیئرمین امامیہ آرگنائزیشن پاکستان افسر حسین خان، مولانا محمد خان،سید حسنین جعفر زیدی، سید حسن کاظمی، اور رائے ناصر شامل تھے جنہوں نے محرم مجالس اور جلوسوں کے حوالے سے درپیش مسائل سے آئی جی پنجاب کو آگاہ کیاجن کے ازالے کے حوالے سے آئی جی پنجاب نے موقع پر احکامات جاری کردئیے۔ 

دوران ملاقات علمائے اکرام نے پنجاب پولیس کی جانب سے محرم جلوسوں اور مجالس کے مجموعی سیکیورٹی انتظامات پر اطمینان کا اظہار کیا۔آئی جی پنجاب نے ڈی آئی جی آپریشنز پنجاب سہیل سکھیرا کوہدایت کی کہ اس بات پر خصوصی توجہ رکھیں کہ صوبے کے تمام اضلاع میں فیلڈ افسران محرم سیکیورٹی انتظامات کرتے وقت منتظمین کی تجاویز کوبھی مد نظر رکھیں تاکہ باہمی مشاورت سے بہتر سے بہتر سیکیورٹی انتظامات کئے جائیں۔

مزید :

علاقائی -