شریف گروپ آف کمپنیز کے سی ایف او کے جسمانی ریمانڈ میں توسیع

شریف گروپ آف کمپنیز کے سی ایف او کے جسمانی ریمانڈ میں توسیع

  

 لاہور (نامہ نگار خصوصی)شریف گروپ آف کمپنیز کے چیف فنانشل آفیسر کے جسمانی ریمانڈ میں توسیع کردی گئی ملزم کو ریمانڈ ختم ہونے پر احتساب عدالت میں پیش کیا گیا۔ نیب نے سی ایف او عثمان کے جسمانی ریمانڈ کی استدعا کی گئی،نیب پراسکیوٹر نے کہا کہ چیئرمین نیب کی منظوری کے بعد عثمان کے وارنٹ گرفتاری جاری کیے گئے، محمد عثمان، شریف خاندان کی مبینہ منی لانڈرنگ میں اہم کردار ہے ملَزم شریف خاندان کے اکاؤنٹس دیکھتا اور کالا دھن سفید کرتا، نیب پراسیکیوٹر نے مزید کہا کہ چیف فنانشل آفیسر عثمان شریف خاندان کے لئے جعلی بنک اکاؤنٹس بنانے اور ملازمین کے نام پر اکاونٹس کھلوانے کے لئے معاونت کرتا رہا جبکہ مشتاق چینی نے سی ایف او عثمان کے منی لانڈرنگ میں ملوث ہونے سے متعلق بیان دیا تھااورعثمان 2005 میں شریف خاندان کے کاروبار کے ساتھ بطور چیف فنانشل آفیسر تعینات ہوا، نیب پراسیکیوٹر کا مزید کہنا تھا کہ سلمان شہباز کے کہنے پر ملزم محمد عثمان، قاسم قیوم کے ساتھ مل کر منی لانڈرنگ اور جعلی ٹی ٹی کا نظام چلاتا رہا، عثمان شہباز شریف اور اہل خانہ کے درمیان اور تمام فرنٹ مین کے درمیان رابطے کا کردار ادا کرتا رہا ہے۔

ریمانڈ میں توسیع 

مزید :

صفحہ آخر -