میرا دامن صاف ہے ڈرنے کی ضرورت نہیں، نیب نے ملزم نہیں بطور گواہ بلایا، سوالات کے جواب دونگا: عثمان بزدار، قومی اور صوبائی اسمبلی ارکان کا وزیراعلٰی پر اظہار اعتماد 

  میرا دامن صاف ہے ڈرنے کی ضرورت نہیں، نیب نے ملزم نہیں بطور گواہ بلایا، ...

  

 لاہور(جنرل رپورٹر،)وزیر اعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدارنے گزشتہ روز لاہور چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری میں ون ونڈو سمارٹ سروس سینٹرکا افتتاح کیا۔وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے سمارٹ سروس سینٹر میں فراہم کی جانے والی سہولتوں کا جائزہ لیا۔اس موقع پر انہوں نیسمارٹ سروس سینٹر میں تمام سہولتیں یکجا کرنے کے اقدام کو سراہتے ہوئے کہا کہ کاروبار میں آسانیاں پیدا کرنے کیلئے ون ونڈو سمارٹ سروس سینٹرکا قیام خوش آئند ہے۔ صدر لاہورچیمبر آف کامرس عرفان اقبال شیخ نے وزیراعلیٰ عثمان بزدار کو ون ونڈو سمارٹ سروس سینٹرمیں فراہم کردہ سہولتوں کے بارے میں بریفنگ دی۔لاہورچیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے دیگر عہدیداران بھی اس موقع پر موجود تھے۔بعدازاں وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدارنے لاہورچیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری میں صنعتکاروں اورتاجروں سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ سٹیٹ آف دی آرٹ ون ونڈوسمارٹ سروس سینٹرمیں بہترین سہولتیں فراہم کی گئی ہیں۔لاہورچیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری سمارٹ سروس سینٹر قائم کرنے والا پہلا چیمبر ہے۔پنجاب کے دیگر چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کو بھی سمارٹ سروس سینٹر قائم کرنے چاہئیں۔انہوں نے کہا کہ کورونا وباء کے شروع میں لاہور چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری نے متاثرہ بہن بھائیوں کی مدد کیلئے سب سے پہلے وزیراعلیٰ فنڈ میں عطیہ دیا۔الحمد اللہ ہم اب پری کورونا صورتحال پر پہنچ چکے ہیں اور وزیراعظم عمران خان کی قیادت میں بروقت فیصلے کر کے کورونا کا پھیلاؤ روکا۔دیگر ملکوں کے مقابلے میں پاکستان میں کورونا کے حوالے سے صورتحال بہت اچھی ہے۔وزیراعلیٰ نے کہا کہ پنجاب حکومت صنعتکاروں اورتاجروں کیلئے آسانیا ں پیدا کررہی ہے۔ صنعتوں میں انسپکٹرز کی انسپکشن ختم کرنے پر کام کیا جارہا ہے۔ صنعتکاروں اورتاجروں کی سہولت کیلئے متعلقہ محکموں میں فوکل پرسن تعینات کیے جائیں گے۔وزیراعلیٰ نے کہا کہ 70برس میں صرف تین سپیشل اکنامک زون بنائے گئے۔ہم نے2برس میں 13سپیشل اکنامک زون میں کام شروع کیا ہے۔7سپیشل اکنامک زون نوٹیفائی ہوچکے ہیں۔عثمان بزدارنے کہا کہ جنوبی پنجاب سیکرٹریٹ کو بااختیار بنانے کیلئے رولز آف بزنس میں ضروری ترامیم کی منظوری دی جاچکی ہے۔جنوبی پنجاب سیکرٹریٹ میں مکمل سیکرٹریز بیٹھیں گے جو بااختیار ہوں گے۔وزیراعلیٰ نے مزید کہا کہ امن و امان کی صورتحال دیگر صوبوں کی نسبت بہت بہتر ہے۔ ماڈل پولیسنگ کے نظام کو ہر شہر تک لے کر جائیں گے۔ماضی میں پولیس کو سیاسی طورپر استعمال کیا جاتا تھا۔ہم نے پولیس کو بااختیار بنایا ہے۔ پولیس میں 10ہزار بھرتیاں میرٹ پر کی جارہی ہے۔ پولیس کو 575نئی گاڑیاں دے رہے ہیں۔45نئے تھانے بن رہے ہیں اور101تھانوں کیلئے اراضی فراہم کی جارہی ہیں۔پولیس کیلئے ایگزیکٹو الاؤنس کی منظوری دی جاچکی ہیں۔وزیراعلیٰ نے بتایا کہ لاہورشہر میں نئے پارکنگ پلازہ کی تعمیرپر کام شروع کریں گے۔عثمان بزدارنے کہا کہ شہر کوآلودگی سے بچانے کیلئے ٹریٹمنٹ پلانٹس بہت ضروری ہے۔ہماری حکومت نے ریورراوی اربن ڈویلپمنٹ پراجیکٹ کاسنگ بنیاد رکھا ہے۔ لاہورکے قریب ایک نیا شہربسنے سے آلودگی میں بہت کمی آئے گی۔نیا شہر46کلومیٹر طویل ہوگا۔پونے چھ لاکھ کیوسک پانی ذخیرہ کیا جاسکے گا۔لاہور میں زیر زمین پانی بہت نیچے چلا گیاہے اورفضائی آلودگی بھی بڑھی ہے۔نیا شہربسنے سے زیر زمین پانی کی سطح بلند ہوگی اورآلودگی کے چیلنج پر قابو پانے میں مدد ملے گی۔وزیراعلیٰ نے کہاکہ ماضی میں زرعی شعبہ کی ریسرچ پر کوئی توجہ نہیں دی گئی اور زرعی شعبہ کے ریسرچ ونگ کو کوئی فنڈ نہیں دیاگیا۔ہم نے زرعی ریسرچ اداروں کو فعال بنایا ہے۔زرعی ریسرچ اداروں کو اب کام کرکے دکھانا ہوگا۔صدر لاہورچیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری عرفان اقبال شیخ نے خطبہ استقبالیہ میں کہا کہ سخت معاشی حالات کے باوجود بہترین صوبائی بجٹ پیش کرنے پر وزیراعلیٰ عثمان بزدار اوران کی ٹیم کو مبارکباد پیش کرتا ہوں۔حکومت نے سیلز ٹیکس کی شرح 16فیصد سے کم کر کے 5فیصد جبکہ سٹیمپ ڈیوٹی 5فیصد سے کم کر کے 1فیصد کی ہے جو بہت خوش آئند ہے اورہم اس کا خیر مقدم کرتے ہیں۔دریں اثناء وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدارنے لاہورچیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ نیب نے مجھے بلایا اورمیں پیش ہوا۔جس طرح میں اکیلا گیا آپ سب کے علم ہے۔نیب نے مجھے بطور ملزم نہیں گواہ بلایا۔نیب کے سوالات کا جواب دوں گا۔دامن صاف ہے، ڈرنے کی ضرورت نہیں۔نیب کو تمام سوالات پر مطمئن کروں گا۔وزیراعظم عمران خان کا ہمیشہ مجھ پر اعتماد رہا ہے۔انہوں نے کہاکہ میرے ہاتھ صاف ہیں، اب فرنٹ فٹ پر کھیلیں گے۔ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ پنجاب میں آٹا مقررکردہ نرخوں پر دستیاب ہے۔دیگر صوبوں کے مقابلے میں پنجاب میں آٹے کی قیمتوں میں استحکام آیا ہے۔۔ایک سوال کے جواب میں وزیراعلیٰ نے کہاکہ ایم پی ایز کی طرح اراکین قومی اسمبلی بھی ملاقات کیلئے آتے ہیں۔ اراکین قومی اسمبلی کے مسائل بھی اسی طرح حل کرتا ہوں جس طرح اراکین صوبائی اسمبلی کے۔منتخب نمائندوں سے رابطے رکھنا میری ذمہ داری ہے۔عوامی نمائندوں کے مسائل کے حل کیلئے آخری حد تک جاؤں گا۔ وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدارنے ٹھٹھہ کے قریب کینجھرجھیل میں کشتی الٹنے سے قیمتی انسانی جانوں کے ضیاع پر اظہار افسوس کیا ہے۔وزیراعلیٰ نے جاں بحق افراد کے لواحقین سے دلی ہمدردی واظہار تعزیت کرتے ہوئے کہا ہے کہ پنجاب حکومت جاں بحق افراد کے لواحقین کے غم میں برابر کی شریک ہے۔دریں اثنار وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدارسے سپیکرقومی اسمبلی اسد قیصرکی قیادت میں اراکین قومی اسمبلی نے ملاقات کی۔پنجاب کے اراکین قومی اسمبلی نے وزیراعلیٰ عثمان بزدار پر اعتمادکا اظہار کیا اور وزیراعلیٰ عثمان بزدار کے خلاف منظم پراپیگنڈے کی مذمت کی۔اراکین قومی اسمبلی نے گفتگو کرتے ہوئے کہاکہ عثمان بزدار وزیراعظم عمران خان کے ویژن کے مطابق سرگرم عمل ہیں۔عثمان بزدار نے پنجاب کو یکساں ترقی کے ویژن پر گامزن کیا ہے۔پنجاب میں ترقی کے حقیقی دور کا آغاز ہوچکا ہے۔وزیراعلیٰ عثمان بزدار عوامی آدمی ہیں اورسب سے ملتے ہیں۔پنجاب کے ترقیاتی منصوبوں میں ارکان اسمبلی کی مشاورت کو اہمیت دی جاتی ہے۔وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اراکین قومی اسمبلی کی آمد کا خیر مقدم کرتے ہیں۔پنجاب کے اراکین قومی اسمبلی میرے لئے بے حدقابل احترام ہیں۔پنجاب کے اراکین قومی اسمبلی کا اعتماد میرے لئے اعزاز ہے۔وزیراعلیٰ آفس کے دروازے سب کے لئے کھلے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ارکان اسمبلی کی مشاورت سے پنجاب کے ترقی کے سفرکو آگے بڑھارہے ہیں۔ ایم پی ایز کے ساتھ ساتھ ایم این ایزکی رائے کو بھی اہمیت دے رہے ہیں۔ اراکین اسمبلی دست و بازو ہیں،ان کا کوئی جائز کام نہیں رکے گا۔اراکین اسمبلی کے جائز کاموں کو ترجیحی بنیادوں پر کیا جائے گا۔

عثمان بزدار

مزید :

صفحہ اول -