ایل او سی پر بھارتی جارحیت جاری،مزید 3پاکستانی زخمی، تتہ پانی سیکٹر میں زخمی ہونیوالی خاتون خانہ شہید، سپر د خاک

    ایل او سی پر بھارتی جارحیت جاری،مزید 3پاکستانی زخمی، تتہ پانی سیکٹر میں ...

  

 سما ہنی،تتہ پانی (نیوز ایجنسیاں) بزدل بھارتی فوج کی سما ہنی سیکٹر میں سول آبادی پرپھر اندھا دھند مارٹر شیلنگ سے خاتون سمیت تین افراد زخمی، سکول،گھروں اور شفا خانہ حیوانا ت کی عمارتیں جزوی طور پرتباہ، کثیر تعداد میں مال مویشی ہلاک و زخمی ہوگئے، پاک فوج نے موثر جوابی کارروائی سے دشمن کی گنیں خاموش کرا دیں۔ ہفتہ کے روز تتہ پانی گوئی سیکٹر میں بھارتی فوج کی بلاشتعال گولہ باری اور فائرنگ میں زخمی ہونیوالی خاتون شہید ہو گئیں،جنہیں آبائی قبرستان میں سپرد خاک کر دیاگیا۔ تفصیلات کے مطابق گزشتہ رات بھارتی فوج نے سما ہنی سیکٹر میں چاہی نہالہ، بڑوھ سمیت کئی علاقوں کو ہیو ی مارٹر شیلنگ کا نشانہ بنایا جس سے تین افراز خمی ہو گئے جن میں ساجد ولد ارشاد چاہی کھڑالی، عبداللہ ولد صغیر ساکن چاہی موڑھا ٹھکرا اور پچاس سالہ زاہدہ بی بی زوجہ اللہ داد چاہی ڈھیری شامل ہیں، زخمیوں کو فوری طبی امداد کے بعد بھمبر ڈی ایچ کیو ہسپتال ریفر کر دیا گیا، بھا ر تی گولہ باری سے درجنوں مال مو یشی ہلاک و زخمی ہوئے،بڑوھ گاہی میں شریف ولد صدیق کی بھینس، بچھڑے، ہلاک ہوگئے جبکہ سونا ویلی میں نعیم اختر ولدیونس کی دو گائیں،عبدالخالق ولد تعظیم اقبال، شاہد محمو د ولد شریف کی گائے بھنسیں اور بکریاں زخمی ہو ئیں۔ دوسری طرف بھا رتی فوج کے داغے گئے مارٹر گولوں کے لگنے سے کئی گھروں کی چھتوں میں سوراخ ہو گئے، مارٹر شیلنگ سے متعد د گاڑیوں کو نقصان پہنچا، بلا اشتعال گولہ باری سے گورنمنٹ مڈل سکول اور شفاخانہ حیونات سونا ویلی کی عمارتوں کو شدید نقصان پہنچا۔بھارتی فوج کی آئے روز سیز فائر معاہدے کی خلاف ورزیوں پر ایل او سی پر بسنے والی سول آبادی نے مطالبہ کیا کہ عالمی برادری بھارتی جنگی جنون جو خطہ کو ایک ایٹمی جنگ کی طرف دھکیلنے کی طرف مزموم کوشش ہے کا نوٹس لے۔انکامزید کہنا تھا بھارتی فوج اورحکومت جان لے کنٹرول لائن پر بسنے والے لوگ بھا ر تی بزدلانہ کارروائیوں سے خوفزدہ نہیں ہونگے بلکہ پاک فوج کے شانہ بشانہ ملکی سالمیت کیخلا ف اٹھنے والے ہر قدم کا منہ توڑ جواب دیں گے۔دریں اثناء لائن آف کنٹرول پر چار روزقبل تتہ پانی گوئی سیکٹر میں بھارتی فوج کی بربریت کا شکار خاتون شکیلہ بی بی زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے ڈی ایچ کیو ہسپتال میں جام شہادت نوش کرگئی،جبکہ انکی دس سالہ بیٹی عائشہ رفیق تاحال زیر علاج ہے۔ شہید خاتون کو آبائی گاؤں کے قبرستان میں سیکڑو ں سو گو ا رو ں کی موجودگی میں سپرد خاک کردیا گیا، نمازجنازہ میں ممبر اسمبلی و سابق سینئر وزیرملک نواز خان، سیاسی، سماجی شخصیات اور دیگر تمام مکاتب فکر کے افرادشریک ہوئے۔

بھارتی فائرنگ 

مزید :

صفحہ اول -