ہم حق کی آواز پر قائم، ڈی ایف سی کی بلیک  میلنگ میں نہیں آئیں گے، شیخ شہباز

  ہم حق کی آواز پر قائم، ڈی ایف سی کی بلیک  میلنگ میں نہیں آئیں گے، شیخ شہباز

  

وہاڑی(بیورورپورٹ،نامہ نگار)ڈسٹرکٹ فوڈ کنٹرولرچوہدری خالد(بقیہ نمبر43صفحہ6پر)

کے ناروا رویہ اورمبینہ رشوت طلب کرنے کے خلاف فلورملزایسوسی ایشن کی ہڑتال چوتھے روزبھی جاری رہی،ضلع کی پندرہ میں سے انتظامیہ کی حمایت یافتہ تین فلورملزکوکھلی چھوٹ آٹاکے من مرضی نرخ وصول کرنے لگیں،ضلع بھرمیں آٹا کی قلت پرشہری پریشان۔تفصیل کے مطابق ڈسٹرکٹ فوڈکنٹرولرچوہدری خالدکی مبینہ ہٹ دھرمی اور فلورملزکوبلاجوازشوکازنوٹسزاورجرمانوں کے خلاف فلورملزایسوسی کی ہڑتال چوتھے روزبھی جاری رہی وائس چئیرمین پنجاب وضلعی صدرفلورملزایسوسی ایشن شیخ شہبازنے ضلعی انتظامیہ کے ساتھ ہونے والی میٹنگ میں مبینہ طور پریہ الزام عائدکیاکہ ڈسٹرکٹ فوڈکنٹرولرچوہدری خالد نے وہاڑی میں تعیناتی کے چند دن بعدہی مبینہ طورپر50 ہزارروپے فی مل رشوت ماہانہ کامطالبہ شروع کردیاانکارپرمخلتف مل مالکان کوشوکازنوٹسز بھیج دیئے جبکہ کچھ ملزمالکان کو ایس او پیز کی خلاف ورزی کے غلط الزامات لگاکربھاری جرمانے بھی کئے انہوں نے کہاکہ ضلع بھر میں 15فلورملز ہیں جن میں سے3 فلورملزمالکان ڈسٹرکٹ فوڈکنٹرولرسے مبینہ طور پرسازبازہوکرایس او پیز کی کھلم کھلاخلاف ورزی کرتے ہوئے20کلوکے بجائے 15کلووالاتھیلاایک ہزارروپے میں سپلائی کررہے ہیں حالانکہ حکومت پنجاب نے20کلوآٹاکے تھیلاکے نرخ860روپیمقررکررکھے ہیں  باقی12فلورملزاپنے حقوق کے لئے لڑرہی ہیں ان کاکہناہے کہ ہم کسی طورپرڈی ایف سی کی بلیک میلنگ میں نہیں آئینگے اورنہ ملزچلانے کے لئے غلط راستہ اختیارکریں گے ہم حق کی آوازپرقائم ہیں اگرہمارے ساتھ نارواسلوک بندنہ ہواتوہڑتال جاری رہے گی  دوسری طرف ضلع بھرکی فلورملزکی ہڑتال کی وجہ سے آٹاکی قلت پیداہوگئی ہے شہری پریشان ہیں اورمہنگے داموں آٹاخریدنے پر مجبورہیں جبکہ لڈن سمیت ضلع بھرمیں آٹاکاسنگین بحران پیداہورہاہے آٹاکی عدم دستیابی پرلڈن کی عوام شدیداحتجاج بھی کیاہے دوسری طرف ڈی ایف سی کی سازبازسے چلائی جانے والی تین ملزکامارکیٹ میں فروخت ہونے والے آٹاکے تھیلاپرنہ وزن پرنٹ ہے اورنہ ہی قیمت پرنٹ ہے لیکن پھربھی محکمہ فوڈکی مبینہ ملی بھگت سے مارکیٹ میں فروخت ہورہاہے اورشہری  خریدنے پرمجبورہیں شہریوں نے وزیراعظم عمران خان اور وزیراعلی پنجاب سے فوری نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔

شیخ شہباز

مزید :

ملتان صفحہ آخر -