خلفائے راشدین کے ایام وصال، شہادت سرکاری طور پر منائے جائیں،فاروق خان سعیدی

خلفائے راشدین کے ایام وصال، شہادت سرکاری طور پر منائے جائیں،فاروق خان سعیدی

  

 ملتان (سٹی رپورٹر)جماعت اہل سنت پاکستان پنجاب کے صوبائی ناظم اعلی علامہ حافظ محمد فاروق خان سعیدی،رکن صوبائی مجلس عاملہ پنجاب قاری محمد عبدالغفار نقشبندی،آرگنائزر جماعت اہل سنت ملتان ڈویژن سید محمد رمضان شاہ فیضی،ضلعی ناظم اعلی قاری مطیع الرسول سعیدی،ناظم اعلی ملتان شہر پروفیسر محمد سلیم اشرف قادری،قاضی بشیر احمد گولڑوی،ڈاکٹر ارشد بلوچ نے ملتان پریس کلب میں مشترکہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ ہم چاروں خلفائے راشدین(بقیہ نمبر26صفحہ6پر)

 کے ایام وصال و شہادت سرکاری طور پر عقیدت و احترام سے منائے جائیں اور قوم کو ان مقدس ہستیوں کی عظمت وشان اور لازوال کارناموں سے آگاہ کیا جائے یہ امر نہایت خوش آئند ہے کہ خیبر پختونخواہ حکومت گذشتہ کچھ برسوں سے یوم شہادت سیدنا عمر فاروق اعظم ؓ پر یکم محرم کو سرکاری تعطیل کررہی ہے اب سندھ کے علاوہ پورے ملک میں پی ٹی آئی کی حکومت ہے ہم وزیراعظم پاکستان عمران خان سے مطالبہ کرتے ہیں کہ خلفائے راشدین کے ایام وصال و شہادت پر سرکاری تعطیل کا آغاز اسی یکم محرم کو یوم شہادت سیدنا عمر فاروق اعظم ؓ سے کیا جائے خلافت راشدہ کا مبارک دور ہی ریاست مدینہ کی مکمل تصویر ہے اسی نظام کے نفاذ ہی سے ہماری جملہ مشکلات حل ہوسکتی ہیں سیدنا عمر فاروق اعظم ؓ کے یوم شہادت کے سلسلہ21اگست بروز جمعہ بعد نماز عشاء محلہ جال شیخ موسیٰ اندرون پاک گیٹ میں سالانہ مرکزی قدیمی اجتماع منعقد ہوگا جس میں نامور علماء مشائخ اور دانشور شریک ہو کر تاجدار عادل وحریت کو خراج عقیدت پیش کریں گے آئندہ جمعہ 21 اگست یکم محرم الحرام ہوگا ہم علماء،خطباء اور آئمہ مساجد سے اپیل کرتے ہیں کہ خطبات جمعہ میں امام عادل وراشد سیدنا عمر بن خطاب فاروق اعظم ؓ کی عظمت وجلالت آپ کا لازوال عہد خلافت،فتوحات عظیمہ اور عہدفاروق اعظم کی اولیات پر خطبات جمعہ دیں پاکپتن شریف میں حضرت بابا فرید الدین مسعود گنج شکر فاروقیؒ جن کی درگاہ پاکستان میں سلسلہ عالیہ چشتیہ کی سب سے بڑی خانقاہ ہے اور برصغیر پاک وہند میں تیسری بڑی درگاہ ہے آپ کا آستانہ پونے آٹھ سوسال سے مرجع خلائق ہے مگر مقام افسوس ہے کہ اس مرتبہ ماہ محرم میں باباصاحب کے عرس پر ناجائز پابندیاں عائد کی گئی ہیں ایسا پونے آٹھ سوسال میں پہلی مرتبہ ہوا ہے اس سے لاکھوں عقیدت مندوں کے جذبات مجروح ہوئے ہیں ہم محکمہ اوقاف یا پاکپتن کی ضلعی اور ڈویژنل انتظامیہ کا کسی ایک شخصیت سے معاملات طے کرلینا مسئلے کا حل نہیں ہے کراچی سے خیبر تک لاکھوں زائرین عرس مبارک میں حاضری دیتے ہیں ان عقیدت مندوں میں شدید اضطراب پایا جاتا ہے د وزیراعظم پاکستان اس عظیم درگاہ کے مستقل زائرین میں شامل ہیں ہم پر زور مطالبہ کرتے ہیں کہ باباصاحب کے عرس مبارک پر پابندیاں فی الفور ہٹائی جائیں اور جیسے دوسری اجتماعات،مجالس وجلوسوں کی اجازت دی جارہی ہے ایس او پیز کی پابندی کے ساتھ عرس مبارک کی تمام سابقہ تقریبات کو بحال کیا جائے یہ لاکھوں عوام کی عقیدت کا مسئلہ ہے اس سلسلہ میں کی قسم کا عاجلانہ اور عاقبت نااندیشانہ فیصلہ غلط اثرات مرتب کرے گا متحدہ عرب امارات نے اسرائیل کو تسلیم کرکے مظلوم فلسطینی مسلمانوں کی پیٹھ میں خنجر گھونپا ہے یہ عالم اسلام کے مشترک مقاصد سے بدعہدی اور مظلوم ومجبور مسلم فلسطینی بھائیوں سے شرمناک بے وفائی ہے پاکستان اپنے قیام سے اب تک فلسطین کی آزادی کا علمبردار ہے اور رہے گا ہم اس فیصلہ کی پرزور مذمت کرتے ہیں ہنودہویا یہود یہ عالم اسلام کے مشترکہ دشمن ہیں اور ان کی سازشوں کا مقابلہ کرنا تمام عالم اسلام کی ذمہ داری ہے پاکستان صرف مسلم قومیت کی بنیاد پر اور مظلوم فلسطینیوں کی حمایت کی وجہ سے اسرائیل وہندوستان کاشکار ہے او آئی سی،عرب ممالک اور حجاز مقدس کے حکمران فی الفور اس کا نوٹس  لیں اور اپنی ذمہ داریاں بروقت ادا کریں۔

فاروق خان سعیدی

مزید :

ملتان صفحہ آخر -