معاون خصوصی کامران بنگش کا غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ کا نوٹس، پیسکو آفس پہنچ گئے 

معاون خصوصی کامران بنگش کا غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ کا نوٹس، پیسکو آفس پہنچ ...

  

پشاور(سٹاف رپورٹر)وزیراعلی خیبرپختونخوا کے معاون خصوصی برائے اطلاعات و بلدیات کامران بنگش، پی کے 77 میں بالخصوص اور دیگر علاقوں میں بالعموم جاری بجلی لوڈشیڈنگ کے مسئلے کا نوٹس لیتے ہوئے پیر کے روز پیسکو آفس پشاور گئے۔ جہاں انہوں نے پیسکو چیف جبار خان کے ساتھ غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ، اوور لوڈنگ اور دیگر بجلی ایشوز پر تفصیلی بحث کی۔ اس موقع پر پیسکو چیف جبار خان نے پی کے 77 سمیت دیگر علاقوں میں بجلی ایشوز ترجیحی بنیادوں پر حل کرانے کی یقین دہانی کرا دی۔ملاقات کے دوران لوڈشیڈنگ ایشوز کے حوالے سے ریمارکس دیتے ہوئے معاون خصوصی کامران بنگش نے کہا کہ گزشتہ کئی روز سے خود لوڈشیڈنگ کے مسئلے کا شکار ہوں۔ اہل حلقہ کی جانب سے بھی اوور لوڈنگ، ٹرپنگ اور ٹرانسفارمر سمیت کئی دیگر شکایات سامنے آ رہی ہیں جن کا مستقل حل بہت ضروری ہو گیاہے۔ انہوں نے واضح کیا کہ ایسا نہیں کہ میں اے سی میں بیٹھوں اور عوام کو بجلی میسر نہ ہو۔ عوامی مسائل کے حل کے لیے تمام وسائل بروئے کار لائے جائیں گے۔جناب کامران بنگش نے چیف پیسکو کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ عوام کو اکیلے نہیں چھوڑ سکتے ان کے تمام مسائل حل کریں گے۔ عوام یہ نہ سمجھیں ہمیں ان کی مشکلات کا ادراک نہیں ہے بلکہ ہر روز عوامی شکایات و مشکلات کو سوشل میڈیا و دیگر ذرائع سے حاصل کرتا ہوں جبکہ ان کے حل کے لیے متعلقہ اہلکاروں سے رابطہ بھی قائم کرتا ہوں۔ انہوں نے کہا کہ بجلی کا مسئلہ آئندہ دنوں میں کم سے کم ہوتا جائے گا۔عوام سے اپیل کرتے ہوئے معاون خصوصی برائے وزیراعلٰی نے کہا عوام کنڈا کلچر کے خلاف پیسکو کا ساتھ دیں۔ کیونکہ کنڈا بجلی حرام ہے، اسلام و قانون دونوں کے منافی ہے۔ جو لوگ کنڈا بجلی استعمال کر رہے ہیں ان کے نام پیسکو شکایت سیل پر متعلقہ حکام کو دی جائیں تاکہ بجلی چوروں سے عام آدمی اور پیسکو دونوں کو چھٹکارا مل سکے۔بجلی بچت و کفایت کے ساتھ استعمال پر بات کرتے ہوئے معاون خصوصی برائے اطلاعات و بلدیات کامران بنگش نے کہا کہ عوام بجلی کے باکفایت استعمال کے لیے غیر ضروری استعمال ترک کر دیں تاکہ صوبے میں بجلی لوڈشیڈنگ پر قابو پایا جا سکے۔ صوبائی حکومت کی جانب سے اٹھائے گئے اقدامات کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان تحریک انصاف کی حکومت نے صوبے میں کئی پاور پراجیکٹ پر کام شروع کیا ہوا ہے جو بہت جلد پایہ تکمیل تک پہنچ جائیں گے جس کے بعد صوبے میں لوڈشیڈنگ کے مسئلے سے مکمل طور پرچھٹکارا پاسکیں گے

مزید :

صفحہ اول -