ذیشان ضیاءکو اپنے دوسرے سابق شوہر کے خلاف جھوٹے اور بے بنیاد الزام لگانا مہنگا پڑگیا

ذیشان ضیاءکو اپنے دوسرے سابق شوہر کے خلاف جھوٹے اور بے بنیاد الزام لگانا ...
ذیشان ضیاءکو اپنے دوسرے سابق شوہر کے خلاف جھوٹے اور بے بنیاد الزام لگانا مہنگا پڑگیا

  

لاہور (ویب ڈیسک) ذیشان ضیاءکو سوشل میڈیا کا استعمال مہنگا پڑگیا، سابقہ شوہر کے خلاف جھوٹے اور بے بنیاد الزامات عائد کرنے پر عدالت کی جانب سے نوٹس جاری۔

تفصیلات کے مطابق معروف سکول چین امریکن لائسٹف کے ایک حصہ کی مالک ذیشان ضیاءکو عدالت کی جانب سے نوٹس جاری کردیا گیا ہے کہ انہوں نے اپنے سابقہ شوہر ڈاکٹر ندیم کیانی اور ان کے سکولوں کے خلاف سوشل میڈیا پر غلط اور بے بنیاد مہم چلائی ہے۔ نوٹس میں کہا گیا ہے کہ ذیشان ضیاءاور ان کے ساتھیوں نے مل کر سادہ لوح لوگوں کو گمراہ کیا اور بچوں کے تعلیمی مستقبل کے ساتھ بدترین مذاق کیا۔ لہٰذا ذیشان ضیاءاور ان کے ساتھی عدالت میں حاضر ہو کر واضح کریں کہ انہوں نے طلبہ اور والدین کو جھوٹی اور بے بنیاد مہم کے ذریعے کیوں پریشان کیا؟

واضح رہے کہ امریکن لائسٹف سکول چین کی بنیاد ڈاکٹر ندیم کیانی نے اپنی سابقہ بیوی ذیشان ضیاءکے ساتھ مل کر رکھی تھی جس کے تحت تقریباً 50 پرانچز کا قیام عمل میں لایا گیا تھا۔ تاہم باہمی ناچاقی کے بعد تین سال قبل میاں بیوی میں طلاق ہوگئی اور ڈاکٹر ندیم کیانی کی طلاق یافتہ بیوی نے نصف سکول پر اپنا دعویٰ کردیا۔ ڈاکتر ندیم کیانی نے جھگڑے سے اجتناب کرتے ہوئے آدھے سکول اپنی سابقہ بیوی کو دے دئیے۔

سکول حاصل کرنے کے بعد ذیشان ضیاءنے تنویر راجپوت اور ذوہیب شاہد کے ساتھ مل کر ڈاکٹر کیانی کے خلاف سوشل میڈیا اور عوامی مقامات پر گمراہ کن مہم شروع کردی جبکہ حقیقت یہ ہے کہ انٹیلیکچوئل پراپرٹی ٹربیونل نے دونوں فریقین کو امریکن لائسٹف کا نام استعمال کرنے کی اجازت دے رکھی ہے۔ ذیشان ضیاءاور اس کے ساتھیوں کے منفی رویہ اور مخالف مہم کے خلاف عدالت نے نوٹس جاری کردئیے ہیں اور ذیشان ضیاءکو ساتھیوں سمیت عدالت طلب کرلیا ہے۔

مزید :

علاقائی -پنجاب -لاہور -