حادثات میں لاشوں کی تصویریں بنانے والوں سے تنگ پولیس اہلکار نے اپنی جیب سے لاشوں کو کفن دینا شروع کردیا، اب تک کتنی لاشوں کوڈھانپ چکا ہے؟ جان کر آپ بھی داد دیں گے

حادثات میں لاشوں کی تصویریں بنانے والوں سے تنگ پولیس اہلکار نے اپنی جیب سے ...
حادثات میں لاشوں کی تصویریں بنانے والوں سے تنگ پولیس اہلکار نے اپنی جیب سے لاشوں کو کفن دینا شروع کردیا، اب تک کتنی لاشوں کوڈھانپ چکا ہے؟ جان کر آپ بھی داد دیں گے

  

نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک) موبائل فونز ہاتھوں میں آنے سے ایک رجحان یہ پڑ گیا ہے کہ حادثے میں خواہ کسی کی موت ہو جائے، اس کی لاش کو سنبھالنے اور ڈھانپنے کی بجائے لوگ ہاتھوں میں فون لے کر ویڈیوز اور تصاویربنانی شروع کر دیتے ہیں۔ لوگوں کے اسی روئیے نے اس بھارتی پولیس اہلکار کو ایسا دھچکا دیا کہ اس نے اپنے پیسوں سے کفن خرید کر ہر اس لاش کو ڈھانپنے کا عہد کر لیا جو اس کے سامنے آئے گی اورگزشتہ 3سال سے وہ اپنے اس عہد پر کاربند ہے اور اب تک 200سے زائد لاشوں کو اپنے خرچ پر کفن دے چکا ہے۔

ٹائمز آف انڈیا کے مطابق اس 49سالہ ہیڈکانسٹیبل کا نام سریش ہنگلیگیا ہے جو ممبئی پولیس میں ملازمت کرتا ہے۔ اس کا کہنا ہے کہ ”کئی سال پہلے ہائی وے پر ایک کار سوار خاتون کو خوفناک حادثہ پیش آ گیا۔ خاتون کی گاڑی ٹکڑے ٹکڑے ہو گئی اور اس کی لاش سڑک پر آ گری۔ اس کے کپڑے بھی مکمل پھٹ گئے اور وہ لگ بھگ برہنہ ہو چکی تھی۔ جب ہم اطلاع ملنے پر وہاں پہنچے تو یہ دیکھ کر مجھے شدید صدمہ ہوا کہ درجنوں لوگ اردگرد کھڑے فون سے خاتون کی برہنہ لاش کی تصاویر اور ویڈیوز بنا رہے تھے اور کسی کو توفیق نہیں ہوئی تھی کہ کپڑے سے اس کو ڈھانپ دے۔ میں نے آگے بڑھ کر خاتون کی لاش کو ڈھانپا اور اس وقت عہد کیا کہ آئندہ جب بھی میں کوئی لاش دیکھوں گا تو اسے اپنی جیب سے کفن دوں گا۔“ 

مزید :

ڈیلی بائیٹس -بین الاقوامی -