اسرائیل کا یو اے ای کیلئے پروازیں چلانے کا اعلان، لیکن یہ کس ملک کی حدود سے گزر کر جایا کریں گی؟ جان کر پاکستانی حیران پریشان رہ جائیں

اسرائیل کا یو اے ای کیلئے پروازیں چلانے کا اعلان، لیکن یہ کس ملک کی حدود سے ...
اسرائیل کا یو اے ای کیلئے پروازیں چلانے کا اعلان، لیکن یہ کس ملک کی حدود سے گزر کر جایا کریں گی؟ جان کر پاکستانی حیران پریشان رہ جائیں

  

تل ابیب(مانیٹرنگ ڈیسک) سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات کے اسرائیل کے ساتھ تعلقات ماضی میں کچھ مخفی رہے تاہم اب یہ منظرعام پر آ رہے ہیں اور پہلی بار اسرائیلی وزیراعظم بنیامین نیتن یاہو نے اسرائیل سے متحدہ عرب امارات کے لیے براہ راست پروازیں چلانے کا اعلان کر دیا ہے جو سعودی عرب کی فضائی حدود سے گزر کر جایا کریں گی۔

 ٹائمز آف انڈیا کے مطابق وزیراعظم نیتن یاہو کا کہنا تھا کہ ”ہم متحدہ عرب امارات کے ساتھ ہونے والے ’نارملائزیشن‘ معاہدے کے تحت ڈائریکٹ پروازیں چلانے کی تیاری کر رہے ہیں۔“

رپورٹ کے مطابق مشرق وسطیٰ کے ممالک اور اسرائیل کے درمیان یہ معاہدہ امریکی سپانسرڈ ہے جس کے تحت فلسطین کے مسئلے سے لے کر ایران کے خلاف لڑائی تک کے مسائل کے حوالے سے خطے میں سیاسی تشکیل نو کی جائے گی۔ متحدہ عرب امارات گزشتہ 70سالوں میں تیسرا عرب ملک ہے جو اسرائیل کے ساتھ تعلقات قائم کرنے جا رہا ہے۔ نیتن یاہو کا کہنا تھا کہ ”یہ ڈائریکٹ پروازیں تل ابیب سے دبئی اور ابوظہبی کے لیے چلائی جائیں گی۔“ تاہم انہوں نے حتمی تاریخ نہیں بتائی کہ کب تک پروازیں شروع ہو جائیں گی۔

مزید :

بین الاقوامی -