بھارتی کامیڈین راجو شری واستو کے دماغی طور پر مردہ قرار دیے جانے کے دعوے، منیجر کی تردید

بھارتی کامیڈین راجو شری واستو کے دماغی طور پر مردہ قرار دیے جانے کے دعوے، ...
بھارتی کامیڈین راجو شری واستو کے دماغی طور پر مردہ قرار دیے جانے کے دعوے، منیجر کی تردید
سورس: File

  

نئی دلی (ڈیلی پاکستان آن لائن) بھارتی کامیڈین راجو شری واستو کو ڈاکٹروں کی جانب سے دماغی طور پر مردہ قرار دے دیا گیا۔ بھارتی میڈیا کےمطابق   راجو شری واستو  کے چیف ایڈوائزر اجیت سکسینا نے نئی دہلی کے آل انڈیا انسٹیٹیوٹ آف میڈیکل سائنس (ایمس)  کے باہر میڈیا سے گفتگو میں بتایا کہ راجو کی طبیعت بدھ کی رات  کو  بگڑ گئی تھی ،  ڈاکٹرز کا کہنا ہے کہ راجوکا دماغ تقریباً مردہ ہوچکا ہے جبکہ دل کو بھی کام کرنے میں مشکلات پیش آرہی ہیں۔

خیال رہے کہ راجو شری واستو کو گزشتہ بدھ کے روز دل کی تکلیف کے باعث ہسپتال منتقل کیا گیا تھا۔ انہیں اس وقت دل کا دورہ پڑا تھا جب وہ ٹریڈ مل پر ورزش کر رہے تھے۔ ان کے بیمار ہونے پر یہ دعویٰ سامنے آیا تھا کہ راجو شری واستو نے بہت زیادہ ورزش کی تھی جس کی وجہ سے انہیں دل کی تکلیف ہوئی۔

  کامیڈین کے منیجر مقبول  کے مطابق گزشتہ  شب  راجو  کی حالت بگڑی، ان کی دماغ کی شریانیں سوج گئیں اور دماغ میں پانی بھی آگیا تھا تاہم ڈاکٹرز نے اس صورتحال کو سنبھال لیا تھا۔ انہوں نے بتایا کہ  دل کی پیچیدگیوں کی وجہ سے انہیں بھاری دوائیں نہیں دی جاسکتیں۔

دوسری جانب بھارتی کامیڈین سنیل پال نے ایک ویڈیو پیغام میں راجو شری واستو کیلئے دعاؤں کی درخواست کی ہے۔ سنیل کے مطابق راجو کے دماغ نے کام کرنا چھوڑ دیا ہے اور اس معاملے میں ڈاکٹرز بھی کچھ نہیں کر پا رہے ہیں۔

نیوز 18 کے مطابق راجو شری واستو کو دماغی طور پر مردہ قرار دیے جانے کے دعوے سامنے آنے پر ان کے منیجر نے ان کی تردید کی ہے۔ راجو کے منیجر کا کہنا ہے کہ ایسا کچھ نہیں ہے، رات کو دو بجے ان کی طبیعت خراب ہوئی تھی، ڈاکٹرز کی ٹیم ان کی صحت کی بحالی کیلئے کام کر رہی ہے۔

منیجر کا مزید کہنا تھا کہ ڈاکٹرز کی جانب سے راجو کو کچھ ادویات دی گئی تھیں جن کا ان کے جسم نے کوئی اچھا رسپانس نہیں دیا، اس کے بعد انہیں انجیکشن دیے گئے جس کی وجہ سے ان کے دماغ کی شریانوں میں پانی آگیا، اس وقت راجو بیہوشی کی حالت میں ہیں۔

مزید :

تفریح -