جرائم کی شرح میں کئی گنااضافہ تشویشناک ہے،میاں مقصود

جرائم کی شرح میں کئی گنااضافہ تشویشناک ہے،میاں مقصود

  



لاہور(نمائندہ پاکستان) امیر جماعت اسلامی پنجاب میاں مقصود احمد نے کہا ہے کہ پنجاب میں جرائم کی شرح میں کئی گنا اضافہ انتہائی تشویش ناک ہے۔ حکمرانوں کی عاقبت نااندیش پالیسیوں کی بدولت عوام کے جان ومال غیر محفوظ ہوچکے ہیں۔حکومت کی تمام ترکوششوں کے باوجود تھانہ کلچر میں بہتری نہیں آسکی۔عوام آج بھی اپنے ساتھ کسی بھی قسم کی واردات پیش آنے کے باوجود تھانے جانے سے گھبراتے ہیں۔پولیس کی روایتی ہٹ دھرمی سے جرائم میں دن بدن اضافہ ہورہا ہے۔انہوں نے کہاکہ پنجاب پولیس کے اپنے اعدادوشمار کے مطابق یکم جنوری تا31اکتوبر2017تک لاہور سمیت صوبے بھر کے تھانوں میں مجموعی طورپر 3لاکھ41ہزار829مقدمات درج کیے گئے۔اس دورانیے میں3437افراد قتل جبکہ اقدام قتل کے3774واقعات درج ہوئے۔صوبے کی ناگفتہ بہ صورتحال سے یوں محسوس ہوتاہے کہ پولیس اور قانون نافذ کرنے والے ادارے عملاً غیر فعال ہوچکے ہیں۔انہوں نے کہاکہ اغواکے11730مقدمات درج کیے گئے جبکہ اغوا برائے تاوان کے35واقعات ہوئے۔ڈکیتی کے569،چوری کے10ہزار359اور وہیکل چھیننے کے 2909مقدمات کادرج ہونا حکمرانوں کی کارکردگی پربہت بڑاسوالیہ نشان ہے۔قانون نافذ کرنے والے اداروں کو جدیدٹیکنالوجی اور بے دریغ وسائل فراہم کرنے کے باوجود صوبے میں جرائم کی شرح میں کسی قسم کی کوئی کمی واقع نہیں ہوئی۔تھانے جرائم پیشہ افراد کی آماج گاہ بن چکے ہیں۔میاں مقصوداحمدنے مزیدکہاکہ قومی میڈیا میں آئے روز ڈکیتی،راہزنی اور قتل وغارت گری کے خبریں سامنے آتی رہتی ہیں مگر ان کے سدباب کے لیے کچھ نہیں کیاجاتا۔

میاں مقصود

مزید : میٹروپولیٹن 1


loading...